قومی

الیکشن کمیشن اراکین کی تقرری پر حکومت اور اپوزیشن میں ڈیڈلاک برقرار

الیکشن کمیشن کے اراکین کی تقرری پر حکومت اور اپوزیشن میں ڈیڈلاک ختم نہیں ہوسکا. سپیکر کی قائم کردہ بارہ رکنی کمیٹی میں بھی کوئی پیش رفت نہیں ہو سکی ہے. الیکشن کمیشن کے دو اراکین کی تقرری کا معاملہ حکومت اور اپوزیشن کی توجہ کا منتظر ہے. حکومتی اور اپوزیشن ارکان ایک دوسرے کو ڈیڈ لاک کا ذمہ دار ٹھہرا رہے ہیں. پارلیمنٹ ہاؤس میں گفتگو کرتے ہوئے رہنما ن لیگ رانا ثناء اللہ کا کہنا تھا کہ حکومت نے الیکشن ارکان کی تعیناتی کیلئے اپوزیشن سے مشاورت نہیں کی جو غیر آئینی ہے. پی پی پی کے سینئر رہنما خورشید شاہ نے کہا کہ اگر حکومت نے کوئی غیر آئینی اقدام کیا تو اسے عدالت میں چیلنج کیا جائے گا۔ الیکشن کمیشن سندھ اور بلوچستان کے ارکان کی مدت چھبیس (26) جنوری کو ختم ہوگئی تھی۔ آئین کے مطابق پینتالیس (45) دن میں ارکان کی تقرری کرنا ضروری ہے۔

Comment here

Subscribers
Followers