قومی

خیبر پختونخوا، پلاسٹک بیگز پر پابندی کے بار بار اعلانات، عمل درآمد نہ ہو سکا

خیبر پختونخوا میں پلاسٹک بیگز کے استعمال پر پابندی کے اعلانات تو کئی بار کیے گئے مگر عمل درآمد نہ ہو سکا۔ اب کی بار محکمہ امداد، بحالی و آباد کاری نے پلاسٹک تھیلوں کے استعمال پر پابندی عائد کر دی۔ اپنے ماتحت اداروں کو مراسلہ بھی جاری کر دیا ہے۔ خیبر پختونخوا میں اسمبلی سے پاس ہونے والا ایک اور قانون فائلوں کی نذر ہوتے ہوتے بچ گیا. صرف ایک ادارے نے پلاسٹک بیگ کے استعمال پر پابندی عائد کی۔ محکمہ امداد، بحالی و آباد کاری نے اپنے ذیلی اداروں ریسکیو 1122 پی ڈی ایم اے اور شہری دفاع کو مراسلے جاری کر دیے۔
2015ء میں پاس ہونیوالے بل پر محکمہ ماحولیات، ضلعی انتظامیہ و حکومتیں عمل درآمد نہ کروا سکیں۔ اب کے محکمہ امداد، بحالی و آباد کاری میدان میں آ گیا ہے. بات حد سے نکلی تو پشاور کی ضلعی انتظامیہ نے شاپنگ بیگز کے استعمال پر دفعہ 144 بھی نافذ کی مگر خرید و فروخت نہ رک سکی. قانون کے مطابق خلاف ورزی پر کم از کم پچاس ہزار اور زیادہ سے زیادہ پچاس لاکھ روپے جرمانہ کیا جائیگا. تاہم حکومتی اعلانات کے باوجود قابل تحلیل تھیلوں کے بجائے پولی تھین بیگز کا استعمال جاری ہے۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers