قومی

بیوروکریسی ایمانداری سے کام کرے تو نیب کیوں بلائے گا، چیئر مین نیب

چیئرمین نیب کا کہنا ہے 56 کمپنیوں کے سکینڈل میں ایک کمپنی نے پلی بارگین کے تحت ایک ارب روپے واپس کر دیے ہیں. بدعنوان عناصر سے اب تک 303 ارب روپے وصول کر کے قومی خزانے جمع کرائے جا چکے ہیں۔
لاہور میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین نیب نے کہا کہ کمپنی نے پلی بارگین میں ایک ارب روپے کی جائیدادوں کے کاغذات چیف سیکریٹری کے حوالے کیے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ نیب کے خلاف پروپیگنڈا کیا گیا، اس کی وجہ سے بیوروکریسی نے کام کرنا چھوڑ دیا. آئندہ وہ حاضر سروس اور ریٹائرڈ بیوروکریٹس کے خلاف شکایت کا خود جائزہ لیں گے. ضرورت پڑی تو صرف سوالنامہ بھجوایا جائے گا۔ انہوں نے کہا بیوروکریسی ایمانداری سے کام کرے تو نیب کیوں بلائے گا. آئندہ وہ کسی سیکرٹری اور ایڈیشنل سیکرٹری کے خلاف شکایت کا جائزہ خود لیں گے۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers