قومی

اپوزیشن نے 10برس میں 56 ارب ڈالر کے بیرونی قرضے لیے، علی زیدی

وفاقی وزیر علی زیدی کا کہنا ہے کہ ن لیگ اور پیپلز پارٹی نے گزشتہ دس برس میں چھپن (56) ارب ڈالر کے بیرونی قرضے لیے۔ پیسہ واپس موجودہ حکومت نے کرنا ہے۔ اپوزیشن نے لوٹ مار کی اور پیسہ ملک سے باہر پہنچایا۔ بلاول اپنے والد سے پوچھیں کہ بیرون ملک محل کیسے بنائے، خورشید شاہ نے ایوان میں غلط اعداد و شمار پیش کیے۔
وفاقی وزیر برائے میری ٹائم افیئرز علی زیدی نے پارلیمنٹ ہاوس کے باہر میڈیا گفتگو میں کہا خورشید شاہ نے جو فگر بیان کیے وہ درست نہیں. پی پی لیڈرز تقریر کر کے ایوان سے بھاگ جاتے. انہوں نے کہا کہ 1988 میں ملک کے کل قرضے 13 بلین ڈالرز تھے. 2008 میں پی پی حکومت آئی تو کل قرض 40 بلین ڈالر تھا. ہماری حکومت آنے تک یہ قرض 96 بلین ڈالرز تک پہنچ چکا تھا. پی پی اور ن لیگ نے گزشتہ دس سالوں میں 56 ارب ڈالر کے بیرونی قرضے لیے. چودہ ٹرانزکشنز کے زریعے یہ پیسہ باہر پہنچایا گیا اور محل بنائے گئے.
وفاقی وزیر نے کہا بلاول میں ہمت ہے تو اپنے والد سے پوچھیں کہ یہ محل کہاں سے بنائے گئے اور کچھ نہیں تو بلاول لیاری میں ہونے والی قتل و غارت اور بے نظیر کی شہادت پر یو این رپورٹ کے بارے ہی زرداری سے پوچھ لیں. انہوں نے کہا کہ عمران خان پر تنقید کرنے والے سندھ میں اپنی کارکردگی بھی دیکھ لیں. وفاقی وزیر علی زیدی نے کہا کہ وزیر اعظم کے کامیاب دورہ ایران کے بعد سلپ آف ٹنگ پر تنقید کی جا رہی ہے. قوم کو دیکھنا چاہیے کہ اتنے کم وقت کے دورے کی کہیں مثال نہیں ملتی. ان کا کہنا تھا کہ ہم خطے میں امن کے خواہاں ہیں. سفارتی معاملات پر اپوزیشن کا رویہ افسوسناک ہے۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers