قومی

اسلام آباد: 10سالہ بچی فرشتہ کے قتل کی ابتدائی انکوائری رپورٹ جاری

اسلام آباد میں دس سالہ بچی فرشتہ کے قتل کی ابتدائی انکوائری رپورٹ جاری کر دی گئی ہے. وزیراعظم عمران خان نے غفلت برتنے پر پولیس افسروں کے خلاف ایکشن لے لیا. ترجمان پاک فوج نے بھی تعاون کی پیشکش کر دی. شر انگیز تقریر کرنے پر پی ٹی ایم کی کارکن گلالئی اسماعیل کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے.
وزارت داخلہ کی رپورٹ میں فرشتہ قتل کیس میں اسلام آباد پولیس حکام کو غفلت کا مرتکب قرار دیا گیا ہے۔ رپورٹ کے مطابق فرشتہ کے والد نے پندرہ مئی کو بچی کی گمشدگی سے متعلق پولیس کو رپورٹ کیا مگر چار دن کی تاخیر سے انیس مئی کو ایف آئی آر درج کی گئی. وزیراعظم نے نوٹس لیتے ہوئے آئی جی اور ڈی آئی جی آپریشنز سے وضاحت طلب کر لی ہے.
پی ٹی ایم کی کارکن گلالئی اسماعیل کے خلاف شہری کی درخواست پر تھانہ شہزاد ٹاؤن میں انسداد دہشت گردی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے. ایف آئی آر کے متن میں کہا گیا ہے کہ گلالئی اسماعیل نے زیادتی اور قتل کے واقعہ کو حکومت پاکستان کی طرف موڑنے کی کوشش کی.
ڈی جی آئی ایس پی آر نے اپنے ٹویٹ میں واقعے کی شدید مذمت کی ہے. ان کا کہنا ہے کہ دس سالہ بچی فرشتہ کے قتل میں ملوث ذمہ داروں کو انصاف کے کٹہرے میں لانا ہو گا. فوج ہر ممکن تعاون کے لیے تیار ہے.

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers