قومی

اسلام آباد ہائیکورٹ، آصف زرداری کی ضمانت مسترد کرنے کا تفصیلی فیصلہ جاری

اسلام آباد ہائیکورٹ نے آصف زرداری کی درخواست ضمانت مسترد ہونے کا تفصیلی فیصلہ جاری کر دیا۔ فیصلے میں گرفتاری میں بدنیتی کے تاثر کو یکسر مسترد کر دیا گیا۔ کہا گیا ہے کہ چیئرمین نیب کو ریفرنس فائل ہونے بعد بھی وارنٹ گرفتاری جاری کرنے کا اختیار ہے۔
جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اختر کیانی کا تحریر کردہ فیصلہ جاری کیا گیا ہے. سات صفحات پر مشتمل فیصلے میں سپریم کورٹ فیصلوں کا بھی حوالہ دیا گیا ہے. فیصلہ میں کہا گیا کہ سپریم کورٹ نے ایون فیلڈ ریفرنس فیصلے میں نیب کیسز میں ضمانت کا معیار مقرر کیا جس کا اطلاق ضمانت قبل از گرفتاری کیس میں بھی ہوتا ہے۔ آصف زرداری کی درخواست ضمانت مسترد کرنے کی وجوہات بتاتے ہوئے کہا گیا ہے کہ گرفتاری میں غیر معمولی حالات یا بدنیتی ہو تو عبوری ضمانت دی جا سکتی ہے لیکن نیب مزید تفتیش کیلئے آصف زرداری کو گرفتار کرنا چاہتی ہے جس میں کوئی بدنیتی نہیں۔ اس لیے درخواست ضمانت قبل از گرفتاری کے معیار پر پوری نہیں اترتی جس وجہ سے مسترد کی جاتی ہے۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers