قومی

سرگودھا کے 100 سے زائد دیہات زیر آب، گنے کی فصل تباہ

دریائے جہلم میں طغیانی کے باعث سرگودھا کے ایک سو سے زائد دیہات زیر آب آ گئے ہیں۔ گنے کی کھڑی فصلیں تباہ جبکہ بیشتر خاندان نقل مکانی بھی کر گئے ہیں۔ سنگین صورتحال کے باوجود ضلعی انتظامیہ موقع پر نہیں پہنچ سکی۔
دریائے جہلم میں تغیانی کے باعث سرگودھا کی تحصیل بھیرہ، شاہپور، ساہیوال اور سلانوالی کے درجنوں دیہات زیر آب آ چکے ہیں. ضلعی انتظامیہ کی طرف سے فلڈ وارننگ تو جاری کی گئی لیکن سیلاب آنے کے بعد سے کوئی بھی متاثرہ علاقوں میں نہیں پہنچ سکا جس کی وجہ سے مکینوں کو شدید پریشانی کا سامنا ہے. مکینوں کا کہنا ہے کہ وزیر اعلیٰ پنجاب معاملہ کا نوٹس لیں اور انتظامی افسران کو علاقہ میں بھیجیں.
بھیرہ چھانٹ، کولیاں، کدھ لتھی، ڈھل، چک مبارک، بونگہ سرخرو، ڈھوڈیاں شریف، شاہپور، ساہیوال اور سلانوالی تحصیل سمیت دیگر کئی علاقوں کے مکین اس وقت نقل مکانی کر چکے ہیں. مکینوں کا کہنا ہے کہ گنے کی فصل کو سیلاب سے شدید نقصان پہنچا ہے. ان کے گھر بار مال مویشی سیلاب سے شدید متاثر ہوئے لیکن انتظامیہ نام کی کوئی چیز نہیں نہ ہی کسی عوامی نمائندے نے آ کر ان کا حال پوچھا.
حکومت کو چاہیے کہ سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں فوری امدادی کارروائی شروع کرے تاکہ مشکل میں پھنسے ہوئے لوگوں کو نکالا جا سکے.

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers