قومی

حماد اظہر نے وفاقی وزیر کا قلمدان سمبھال لیا

حماد اظہر کو وفاقی وزیر برائے ریونیو کا قلمدان سونپ دیا گیا، ایف بی آر سمیت متعلقہ ریونیو ادارے اب انکے کنٹرول میں ہونگے۔ حماد اظہر ۱۱ ستمبر ۲۰۱۸ کو بطور وزیر مملکت عمران خان کی کابینہ میں شامل ہوئے اور بجٹ ۲۰۱۹-۲۰ کے پیش نظر ان کی کار کردگی دیکھتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے قومی اسمبلی میں بجٹ کے اجلاس میں انہیں وفاقی وزیر بنانے کا اٰعلان کیا تھا- حماد اظہر سابق گورنر پنجاب میاں ممحمود اظہر کے بیٹے ہیں اور ڈویلپمنٹ اکنامکس کا ڈگری ہولڈر ہونے کے باعث معاشی امور پر کافی عبور رکھتے ہیں-

گو کہ ان کے والد کا تعلق پہلے ن-لیگ سے تھا لیکن حماد نے اپنی سیاست کا آغاز ۲۰۱۱ میں پاکستان تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کر کے کیا- ۲۰۱۳ کے انتخابات میں لاہور کے حلقہ این- اے ۱۲۰ سے الیکشن لڑا تو مسلم لیگ-ن کے امیدوار مہر اشتیاق احمد کے ہاتھوں شکست کا سامنا کرنا پڑا اور صرف ٦۸۳۰۷ ووٹ خاصل کیے -۲۰۱۸ میں اسی حلقے سے فتح یاب ہو کر قومی اسمبلی کے رکن بنے- حکومتی زرائع کے مطابق بطور وزیر مملکت برائے ریوینیو حماد نے ٹیکس کے نیٹ ریٹ میں اظافہ کیا ہے جس سے حکومتی خزانے کو کافی فائدہ ہوا ہے- کچھ دنوں پہلے وزیراعظم عمران خان نے حماد اظہر کے وفاقی وزیر بننے کی سمری منظور کرتے ہوئے صدر پاکستان کو بھیجی تھی اور آج بطور وفاقی وزیر حماد نے آج زمےداریاں سمبھال لیں ہیں-گزشتہ روز صدر عارف علوی نے ان سے وفاقی وزیر کے عہدے کا حلف لیا تھا-ذرائع کے مطابق حماد اظہر پورے ریونیو ڈویژن کے امور کے انچارج ہونگے- ایف بی آر سمیت متعلقہ ادارے اب ان کے کنٹرول میں ہونگے-ذرائع کا کہنا ہے کہ حفیظ شیخ سے ریونیو ڈویژن کے مشیر کا عہدہ واپس لے لیا گیا ہے- وہ مشیر خزانہ مشیر برائے معاشی امور کے طور پر کام کرتے رہیں گے۔

Comment here

Subscribers
Followers