قومی

ایون فیلڈ ریفرنس میں مریم نواز کی پیشی

ایون فیلڈ ریفرنس میں جعلی ٹرسٹ ڈیڈ کے خلاف نیب کی درخواست مسترد، احتساب عدالت نے درخواست نا قابل سماعت قرار دیتے ہوئے خارج کر دی- عدالت کے باہر لیگی کارکنان کی دفع 144 کی خلاف ورزی، کئی کارکنان کو گرفتار کر لیا گیا-
زرائع کے مطابق مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کے خلاف ایون فیلڈ ریفرنس میں جعلی ٹرسٹ ڈیڈ پیش کرنے سے متعلق کیس کی سماعت احتساب عدالت کے معزز جج محمد بشیر نے کی۔
سماعت کے آغاز میں نیب کے ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل سردار مظفرعباسی نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ ٹرسٹ ڈیڈ جعلی تھی، ٹرسٹ ڈیڈ سے متعلق عدالت کا دائرہ اختیار ہے جبکہ اس پہ مریم نواز نے کہا عدالت کا دائرہ اختیارنہیں-
نیب پراسیکیوٹر نے مزید دلائل دیتے ہوئے کہا کہ عدالت نے فرمایا تھا کہ جعلی دستاویزات کا معاملہ فیصلے کے بعد دیکھا جائے گا۔ سردار مظفر عباسی نے ایون فیلڈ ریفرنس کا حکم نامہ عدالت کو پڑھ کرسنایا۔ معزز جج نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد مریم نواز کے خلاف نیب کی جانب سے دائر کردہ جعلی ٹرسٹ ڈیڈ ریفرنس کی درخواست ناقابل سماعت قرار دیتے ہوئے خارج کردی۔
سماعت کے موقع پر عدالت میں پیشی کے لیے مریم نواز نے احتجاج کا نیا انداز اپنایا- انہیں کالے لباس میں ملبوس دیکھا گیا، کالے کُرتے پر سابق وزیر اعظم اور مریم نواز کے والد نواز شریف کی تصویر بنی ہوئی تھی جس پر ’بے گناہ نواز شریف کو رہا کرو‘ کے الفاظ تحریر تھے- نیچے یہی عبارت انگریزی ’’ فری نواز شریف ‘‘ میں بھی تحریر کی گئی تھی-
مریم نواز کا یہ لباس لوگوں کی توجہ کا مرکز بنا اور اس کی تصاویر بہت تیزی سے سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہی ہیں- مریم نواز کا یہ لباس ن لیگی رہنماء اور ایم پی اے حنا پرویز بٹ نے خصوصی طور پر مریم نواز کیلئے تیار کیا ہے۔ حنا سیاست میں سرگرم ہونے کے علاوہ فیشن ڈیزائنر بھی ہیں جن کی فیشن برانڈ ’’ٹینا بائی حنا بٹ‘‘ کے نام سے ہے- سوشل میڈیا پر لباس کی تصاویر وائرل ہونے کے بعد حنا بٹ نے اپنے ٹوئٹر اکاونٹ پہ اپنی قائد کا شکریا بھی ادا کیا-

About Author

Comment here

Subscribers
Followers