بین الاقوامیقومی

امریکی صدر نے دورہ پاکستان کی دعوت قبول کرلی

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ امریکی صدر نے دورہ پاکستان کی دعوت قبول کرلی- امریکہ میں ایڈ نہیں ٹریڈ کی بات کرنےآئے ہیں- برسوں سے جو تعلقات میں سرد مہری آئی تھی وہ اب نہیں رہی، اس میں بہتری آئی ہے- پاکستان کے لیے اب امریکہ کے دروازے کھل چکے ہیں-

واشنگٹن میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان نے امریکی صدر کو دورہ پاکستان کی دعوت دی ہے جس کو انہوں نے خوشی سے قبول کر لیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ امریکی صدر کے دورہ پاکستان کے سلسلے میں جلد معاملات طے کیے جائیں گے جس کے بعد باقاعدہ تاریخ کا اعلان کیا جائے گا۔ ڈونلڈ ٹرمپ نے پاکستان کے سول ملٹری تعلقات پراطمینان کا اظہار بھی کیا اور مثالی سول ملٹری تعلقات کو بے حد سراہا ہے، دونوں رہنماؤں میں تجارت کے ساتھ ساتھ سرمایہ کاری کی بات بھی ہوئی۔

پریس کانفنس میں وزیر خارجہ بولے کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ پاکستان کے معروف وزیراعظم سے ملاقات کر رہا ہوں۔ امریکی صدر نے کہا کہ پاکستان کے ساتھ ماضی سے ہٹ کر مضبوط تعلقات چاہتا ہوں۔ امریکی صدر نے وسیع بنیادوں پر پارٹنرشپ قائم کرنے کی خواہش کا اظہار کیا ہے-

مسٔلہ کشمیر پر انہوں نے کہا کہ پاک- بھارت کے مابین امن کی راہ میں سب سے بڑی رکاوٹ مسئلہ کشمیر ہے اور صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے مسئلہ کشمیر کو پرامن طریقے سے حل کرنے کی خواہش کا اظہار کیا ہے۔ آج تک کسی امریکی صدر نے مسٔلہ کشمیر پر اس طرح کھل کر بات نہیں کی- اگر اس پر کوئی پیشرفت ہوتی ہے تو اس سے برصغیر میں بہتری کا امکان پیدا ہو گا- وزیراعظم نے اوول آفس میں امریکی صدر کو تنازع کشمیر کے بارے میں بتایا۔

وزیر خارجہ مزید بولے کہ وزیراعظم نے سرمایہ کاروں کےساتھ کئی نشستیں کیں اور واضح کیا کہ ہم ایڈ نہیں ٹریڈ چاہتے ہیں، امریکی صدر نےتجارت میں 20 گنا تک اضافےکی خواہش کااظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے درمیان تجارت بہت کم ہے جبکہ دونوں ممالک میں تجارت بڑھانے کے امکانات موجود ہیں- بولے کہ فاٹا الیکشن کے ساتھ دنیا کو بہت بڑا سگنل دیا گیا ہے، جو علاقہ غیر تھا وہاں انتخابات کروائے گئے ہیں، صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے فاٹا انتخابات کو بہت بڑی کامیابی قرار دیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ امریکی صدر نے پاکستان کو عظیم ملک اور وہاں کے لوگوں کو عظیم قرار دیا، ڈونلڈ ٹرمپ نے وزیراعظم عمران خان کی تعریف کرتے ہوئے کہا وزیراعظم اچھے آدمی ہیں۔ جبکہ وزیراٰعظم عمران خان نے بھی کہا کہ ٹرمپ صاف گو آدمی ہیں، وہ لفظوں کی ہیر پھیر نہیں کرتے-

 

آپ کو بتاتے چلیں کہ وزیراعظم عمران خان امریکی صدر کی دعوت پر تین روزہ سرکاری دورے پر امریکا میں موجود ہیں- وزیراعظم عمران خان نے گزشتہ روز واشنگٹن میں پاکستانی کمیونٹی سے خطاب کیا جب کہ اس سے قبل وزیراعظم کی تاجروں اور سرمایہ کاروں سے بھی ملاقاتیں ہوئیں۔ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ بھی عمران خان کے وفد کے رکن کی حیثیت سے ان کے ساتھ موجود ہیں-

وزیراعظم عمران خان نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے وائٹ ہاوس میں ملاقات کی

About Author

Comment here

Subscribers
Followers