قومی

حمزہ شہباز کے جسمانی ریمانڈ میں توسیع

آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں حمزہ شہباز مزید 10 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے- احتساب عدالت میں حمزہ شہباز کے خلاف منی لانڈرنگ کیس کی سماعت ہوئی, جس میں نیب کے وکلاء کی جانب سے قائد حزب اختلاف پنجاب اسمبلی کی فنانشل اسٹیٹمنٹس پیش کی گئی۔

سماعت کے دوران تفتیشی افسر نے عدالت کو آگاہ کیا کہ ملزم حمزہ شہباز کے فنانشل اسٹیٹمنٹس کا ان کے بینک اکاؤنٹس کے ساتھ موازنہ کیا گیا ہے، تمام اکاؤنٹس اور آمدن کا 30 جون 2006 سے 2007 تک موازنہ کیا گیا ہے۔ حمزہ شہباز کے 2005 کے دوران 20 ملین سے 45 ملین تک اثاثوں میں اضافہ ہوتا نظر آیا ہے، دوران تفتیش 2 بے نامی کمپنیاں سامنے آئی ہیں، کمپنیاں نثار احمد، علی احمد خان، ندیم سعید اور محمد طاہر حمزہ نامی ملازموں کے نام پر ہیں، بے نامی کمپنیوں سے 5 ارب روپے کی ٹرانذیکشنز کی گئی ہیں۔ نیب پراسیکیوٹر کا کہنا تھا کہ ملزم حمزہ شہباز کے 2005 کے دوران 20 ملین سے 45 ملین تک اثاثوں میں اضافے پر تفتیش کرنی ہے جب کہ اب تک 16 ملین کی ماڈل ٹاؤن کی جائیداد بیرون ملک سے بھجوائی گئی رقم سے خریدنے کا انکشاف ہو چکا ہے۔

نیب حکام کی جانب سے حمزہ شہباز کے جسمانی ریمانڈ میں 15 دن توسیع کی استدعا کی گئی جبکہ حمزہ شہباز کے وکلاء کا کہنا تھا کہ جو کچھ لکھوایا گیا ہے بے بنیاد ہے جسمانی ریمانڈ کی استدعا مسترد کی جائے۔ احتساب عدالت کے جج نے ن- لیگی رہنماء حمزہ شہباز کا 10 دن کا مزید جسمانی ریمانڈ منظور کر کے ان کو 3 اگست کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم دے دیا۔

پیشی کے موقع پر حمزہ شہباز نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جھوٹ بول بول کر وزیر اعظم کے اوسان خطا ہو گئے ہیں. اپوزیشن کا احتجاج بھی ہو گا، عوام تیار ہے. اس حکومت نے غریب کو مزید مشکل میں ڈال دیا ہے. لوگ موجودہ حکومت کو بد دعائیں دے رہے ہیں. احتجاج ہر سیاسی جماعت کا حق ہے، حکومت فاشزم کا مظاہرہ کر رہی ہے. مہنگائی اور حکومتی انتقامی کارروائیوں کیخلاف عوام احتجاج کیلئے نکلیں گے. عوام موجودہ حکومت سے تنگ آچکے ہیں۔

پیشی کے موقع پر احتساب عدالت میں سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے اور جوڈیشل کمپلیکس آنے والے تمام راستوں کو کنٹینرز لگا کر بند کر دیا گیا تھا جب کہ پولیس اہلکاروں کی بھی اضافی نفری احتساب عدالت کے اندر اور باہر تعینات تھی۔

آپ کو بتاتے چلیں کہ پچھلی سماعت میں وکیل نیب نے کہا تھا کہ حمزہ شہباز تفتیش میں تعاون نہیں کر رہے، حمزہ شہباز نے 96 ایچ ماڈل ٹاؤن کا گھر خریدنے پر رقم کے ذرائع نہیں بتا ئے، گھر کی قیمت 14 کروڑ ہے جس میں صرف ڈیڑھ کروڑ کا پتہ چل سکا۔

About Author

Comment here

Subscribers
Followers