بین الاقوامیقومی

بھارت کی سرحدی دہشتگردی پر پاکستان کا شدید احتجاج

بھارت کی سرحدی دہشتگردی پر پاکستان کا شدید احتجاج، بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کی دفتر خارجہ طلبی، احتجاجی مراسلہ تھمایا گیا، ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ بھارت نے 22 اور23 جولائی کو لائن آف کنٹرول پہ بلا اشتعال فائرنگ کی-

ذرائع کے مطابق بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر گورو اہلووالیا کو ڈی جی جنوبی ایشیا ڈاکٹر محمد فیصل نے طلب کیا۔ انہیں بھارت کی جانب سے 22 اور 23 جولائی کو ایل او سی کے باگسر سیکٹر پر جنگ بندی کی خلاف ورزی پر احتجاجاً طلب کیا گیا-

گزشتہ چند روز سے بھارتی فوج کی جانب سے ایل او سی پر بلااشتعال فائرنگ کے نتیجے میں پاکستانی فوجی اہلکار شہید اور شہری زخمی ہوئے ہیں جس پر پاکستان کی جانب سے شدید احتجاج ریکارڈ کرایا گیا۔ بھارتی فوج کی بلااشتعال فائرنگ سے ایک خاتون اور12 سالہ لڑکا شہید جبکہ چار شہری بھی زخمی ہوئے۔

آپ کو بتاتے چلین کہ گذشتہ روز بھارتی فوج نے لائن آف کنٹرول کے گوئی سیکٹر پر بلااشتعال فائرنگ اور گولہ باری کے نتیجے میں ایک خاتون جان بیگم شہید ہوگئیں جبکہ تتہ پانی سیکٹر پر بھی شہری آبادی کو نشانہ بنایا گیا ، بھارتی فوج کی فائرنگ سے سہڑہ گاؤں کے رہائشی 60 سالہ سردارنسیم زخمی ہوا۔

اس کے علاوہ لائن آف کنٹرول پہ بلااشتعال فائرنگ سے پاک فوج کے حوالدار منصور عباسی بھی شہید ہوئے تھے- آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ پاک فوج نے بھارتی فوج کی فائرنگ کا مؤثر جواب دیا اور فائرنگ کرنے والی بھارتی چوکیوں کو بھی نشانہ بنایا تھا-

 

 

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers