قومیٹیکنالوجی

وزیر سائنس و ٹیکنالوجی نے نیا ٹارگٹ سیٹ کر لیا

وزیر سائنس نے نیا ٹارگٹ سیٹ کر لیا. 2022 تک پہلے پاکستانی کو خلا میں بھیجنے کا اعلان، کہا کہ یہ ایک قابل فخر لمحہ ہو گا. پہلے مرحلے میں 50 افراد کو منتخب کیا جائے گا، ان میں سے 25 شارٹ لسٹ ہونگے-

وفاقی وزیر برائے سائنس و ٹیکنالوجی فواد چودھری کا کہنا ہے کہ 2022 میں پہلا پاکستانی خلا میں جائے گا، جس کی سلیکشن کا عمل 2020 میں شروع ہو جائے گا۔ پہلے مرحلے میں 50 ناموں کو زیر غور لایا جائے گا جس کے بعد یہ لسٹ 25 ناموں تک محدود کر دی جائے گی- سماجی رابطے کی ویبسائٹ ٹوئٹر پریہ پیغام جاری کرتے ہوئے ان کا مزید کہنا تھا کہ 2022میں انشااللہ پہلا پاکستانی خلا میں جائے گا اور یہ اقدام پاکستان کے اسپیس پروگرام کیلئے تاریخ ساز اقدام اور قابل فخر لمحہ ہوگا۔

آپ کو بتاتے چلیں کہ اکتوبر 2018 میں فواد چوہدری نے یہ دعوی کیا تھا کہ 2022 میں پاکستان اپنے پہلے خلائی مشن پر جائے گا۔ پاکستان اور چین کے درمیان خلائی ٹیکنالوجی منتقلی کا معاہدہ ہوگیا ہے. پاکستانی اور چینی خلا بازوں کو مشترکہ طور پراب خلائی مشن پر بھیجا جائے گا اور چین پاکستان کی خلائی تحقیق میں مدد و تعاون بھی فراہم کرے گا اس کے بعد 9 جولائی کو پاکستان نے خلا اور ٹیکنالوجی کی دنیا میں اہم سنگ میل عبور کرتے ہوئے ملکی تاریخ میں پہلی دفع چائنہ کی مدد سے تیار کردہ سیٹلائیٹ PRSS -1 اور پاکستانی انجینئرز کا تیار کردہ سیٹلائیٹ پاک ٹیس-1 اے دونوں سیٹلائٹیس خلا میں بھیجے تھے اور یہ دونوں سیٹلائیٹس چینی راکٹ کی مدد سے لانچ کیے گئے تھے-

اس کے علاوہ وفاقی وزیر نے اپنی ایک اور ٹوئٹ میں 25 جولائی کو فتح کا دن قرار دیا اور لکھا کہ آج کے دن عوام نے عمران خان کی قیادت میں مافیا کو تاریخی شکست سے دوچار کیا تھا۔ مزید کہا کہ آج کے دن پاکستان میں جمہوریت جیت گئی تھی اور ایک نئے سفر کا آغاز ہو گیا تھا- یہ سفر کٹھن ہے، راہ گزر کانٹوں سے پُر اور سنگلاخ لیکن اس کی آخری منزل ایک ترقی کرتا پاکستان ہے۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers