قومی

مون سون بادلوں نے لاہور میں جل تھل ایک کر دیا

مون سون بادلوں نے لاہور میں جل تھل ایک کر دیا- نشیبی علاقے ڈوب گئے، تاج پورہ میں 124 ملی میٹر بارش ریکارڈ، لاہور کے 180 فیڈر ٹرپ کر گئے، کئی علاقوں کی بجلی چلی گئی-

لاہور میں مون سون بادل ایسے جم کر برسے کہ ابر رحمت لوگوں کے لیے زحمت بن گئی- نشیبی علاقے زیر آب سڑکیں پانی پانی ہونے سے ٹریفک کا نظام معطل، لوگوں کو دفاتر اور کاروباری مراکز تک جانے میں دشواری کا سامنا-سب سے زیادہ بارش تاج پورہ میں 124 ملی میٹر ریکارڈ- مزنگ، والٹن، سمن آباد سمیت کئی علاقوں میں پانی جمع شہر بھر کے 180 فیڈر ٹرپ کر جانے سے کئی مقامات کی بجلی معطل ہو گئی جس کی وجہ سے لوگ بے تحاشہ مسائل سے دو چار ہیں- لاہور میں یہ مون سون کے تیسرے اسپیل کا دھواں دھار آغاز ہوا ہے۔ ٹھنڈی ہواؤں کیساتھ تیز بارش ہوئی ہے جس سے شہر بھر سے حبس فیلوقت ختم ہو گئی ہے-

شہر کے مختلف علاقوں میں پانی جمع ہونے سے سڑکیں ندی نالوں کا منظر پیش کرنے لگیں ہیں اور کئی علاقوں میں گاڑیاں خراب ہونے سے ٹریفک بھی جام ہو گئی جس کی وجہ سے لوگ کاروباری مراکز اور دفاتر تک جانے سے قاصر ہو گئے، جب کہ تعلیمی اداروں میں بھی طلباء کی حاضری آج کم ہے-

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی ہدایت پر لاہور میں 35 مختلف مقامات پر امدادی کیمپ قائم کر دیئے گئے ہیں جو کہ بارش سے متاثرہ لوگوں کی مدد کریں گے- جب کہ ددوسری جانب لیسکو ذرائع کا کہنا ہے کہ بارش رکتے ہی بجلی کی بحالی کا کام شروع کر دیا جائے گا۔

مسلسل بارش کے باعث شہر میں نکاس آب کا نظام بلکل معطل ہو گیا ہے- کئں سڑکیں، گلیاں، انڈرپاس تالاب کا منظر پیش کرنے لگے ہیں- جبکہ اندرون شہر کئی گھروں میں پانی داخل ہونے کے باعث مکینوں کو دشواری کا سامنا ہے- اس سب کے باوجود کئی منچلے نوجوانوں نے اپنی مصروفیات ترک کر کے موسم کا لطف لینے کے لیے خوبصورت مقامات اور شاہراہوں کا رخ کیا ہے- اور بہت سے لوگ اس سہانے موسم میں چائے خانوں میں چائے کا لطف لے کر اس موسم کے مزے کو دوبالا کر رہے ہیں-

آپ کو بتاتے چلیں کہ اس سال مون سون سیزن کے دوران ممکنہ طوفانی بارشوں کے پیش نظر دریاؤں میں اونچے درجے کے سیلاب کے خطرے کا امکان ہے جس کی وجہ سے پنجاب ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی نے فوج اور سول اداروں سے رابطہ کر لیا ہے-

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers