قومی

عرفان صدیقی کو رہا کر دیا گیا

عرفان صدیقی کی رہائی کا حکم نامہ جاری، چھٹی کے دن انہیں اڈیالہ جیل سے رہا کر دیا گیا-سابق وزیراعظم نواز شریف کے مشیر کو گزشتہ روز عدالت نے 14 روزہ جوڈیشیل ریمانڈ پہ پولیس کے حوالے کیا تھا


سابق مشیر کا روبکار کی صورت میں اسسٹنٹ کمشنر اسلام آباد مہرین بلوچ نے رہائی نامہ جاری کر دیا – کل اسی اسسٹنٹ کمشنر نے عرفان صدیقی کو جیل بھیجا تھا مگر آج 30 ہزار روپیوں کے مچلکوں کے عوض ان کی ضمانت مہرین بلوچ نے منظور کر لی – جس کے نتیجے میں آج ہی عرفان صدیقی کو اڈیالہ جیل سے رہا کر دیا گیا ہے-

ذرائع کے مطابق عرفان صدیقی کے بیٹے نعمان صدیقی کو ان کی رہائی کی اطلاع دی گئی ، درخواست ضمانت کس نے جمع کروائی یہ کسی کو معلوم نہیں، چھٹی کے روز ہنگامی بنیادوں پہ ضمانتی اقدام نے کئی سوالات کھڑے کر دیے ہیں-

 

آپ کو بتاتے چلیں کہ عرفان صدیقی کو کرایہ داری ایکٹ کی خلاف ورزی پر گرفتار کر کے اسلام آباد کے تھانہ رمنا منتقل کیا گیا تھا۔ پولیس ذرائع کے مطابق عرفان صدیقی نے گھر کرائے پر دے رکھا تھا، انہوں نے کرایہ داری ایکٹ پر عمل درآمد نہ کیا اور نہ ہی پولیس اسٹیشن میں اس کا اندراج کروایا تھا۔

 

پولیس کی جانب سے عرفان صدیقی کو مجسٹریٹ مہرین بلوچ کی عدالت میں پیش کیا گیا اور پولیس نے ان کے جوڈیشل ریمانڈ کی استدعا کی تھی جس پر سابق وزیراعظم کے معاون خصوصی کو 14 روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر اڈیالہ جیل بھیج دیا گیا تھا-

مسلم لیگ ن کی جانب سے اس فیصلے پر حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا تھا اور وفاقی وزیر داخلہ اعجاز شاہ نے بھی اس حوالے سے کہا تھا کہ یہ فیصلہ جس کسی نے بھی کیا ہے اس نے تحریک انصاف کا فائدہ نہیں کیا۔

نواز شریف کے سابق مشیر عرفان صدیقی بھی گرفتار

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers