بین الاقوامی

امریکی صدر کی ایک بار پھر مسٔلہ کشمیر حل کروانے کی پیشکش

امریکی صدر مسٔلہ کشمیر حل کروانے کے لیے تیار. ایک بار پھر ثالثی کی پیشکش کر دی۔ کہا کہ اگر دونوں ممالک مسٔلہ حل کرنا چاہیں تو میں مسٔلہ حل کرنے میں مدد کر سکتا ہوں. عمران خان اور نریندر مودی بہترین لوگ ہیں، مسٔلے کو بہترین طریقے سے حل کر سکتے ہیں۔

وائٹ ہاؤس میں صحافی سے گفتگو کرتے ہوئے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایک بار پھر مسٔلہ کشمیر حل کرنے میں اپنی پیشکش کی بات کی۔ امریکی صدر کا کہنا تھا کہ اگر پاکستان اوربھارت چاہیں تو ثالثی کا کردارادا کرنے کیلئے تیار ہوں۔ امریکی صدر بولے کہ میری عمران خان سے ایک اچھی ملاقات ہوئی ہے. عمران خان اور نریندر مودی دونوں بہت زبردست اور شاندار شخصیات ہیں۔

امریکی صدر کا مزید کہنا تھا کہ خان اور مودی دونوں مسئلہ کشمیر حل کر سکتے ہیں، لیکن اگر وہ چاہتے ہیں کہ اس مسئلے کو حل کرنے میں کوئی اور ان کی مدد کرے تو میں تیار ہوں۔ میں نے پاکستان سے اس سلسلے میں بات کی اور بھارت سے بھی بات چیت کی تھی لیکن بھارت نے اب تک مسئلہ کشمیر حل کرنے کی پیشکش قبول نہیں کی ہے۔ دوسری جانب حمزہ بن لادن کی ہلاکت پر ڈونلڈ ٹرمپ نے تبصرہ کرنے سے گریز کیا اور صرف اتنا کہہ دیا کہ وہ امریکا کو دھمکیاں دیتا تھا۔

جبکہ دوسری جانب مسئلہ کشمیر پر بھارت کی ہٹ دھرمی برقرار ہے اور امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی ثالثی کی پیشکش پر بھارتی وزیرخارجہ جے شنکر نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر آج اپنے پیغام میں کہا کہ کشمیر پاکستان اوربھارت کا دو طرفہ معاملہ ہے. اس معاملے پر بات چیت صرف پاکستان سے ہو گی-

آپ کو مزید بتاتے چلیں کہ وزیراعظم پاکستان عمران خان نے حال ہی میں امریکہ کا کامیاب دورہ کیا، جہاں ان کی امریکی صدر سے ملاقات میں ڈونلڈ ٹرمپ نے ان کو مسٔلہ کشمیر میں ثالثی کا کردار ادا کرنے کی پیشکش کی تھی۔ تاہم بھارت کی جانب سے اس بیان پر کوئی مثبت جواب نہیں آیا تھا۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers