قومی

ای پی سی میں اپوزیشن جماعتوں کی شرکت

مولانا فضل الرحمان کی زیر صدارت میں آل پارٹی کانفرنس۔ کانفرنس میں مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر غور۔ شہباز شریف اور بلاول بھٹو اے۔ پی۔ سی میں شریک نہیں ہوئے۔

اسلام آباد میں جمعیت علمائے اسلام (ف) کے مرکزی قائد مولانا فضل الرحمان کی زیر صدارت اپوزیشن جماعتوں کی اے پی سی شروع ہو گئی ہے۔ اپوزیشن سے تعلق رکھنے والی جماعتیں مسئلہ کشمیر پر پیدا شدہ صورتحال پہ غور و فکر کریں گی۔

اے۔ پی۔ سی میں مسلم لیگ ن، پیپلزپارٹی اور اے این پی کے وفود شریک ہیں۔ اجلاس میں مسلم لیگ ن کی جانب سے احسن اقبال، خواجہ آصف، سردار ایاز صادق شامل ہیں جبکہ پیپلزپارٹی کے وفد میں نئیر بخاری، شیری رحمان اور فرحت اللہ بابر موجود ہیں۔

زرائع کے مطابق مولانا سعید یوسف نے کشمیر کی صورتحال پر وفود کو بریفنگ دینی تھی۔ پہلے مرحلے میں ملکی سیاسی صورتحال کا جائزہ لیا جانا تھا جبکہ دوسرے مرحلے میں مقبوضہ کشمیر کی صورتحال اور بھارتی جارحیت پر غور و فکر ہو گا۔ اجلاس میں چیئرمین سینٹ کے انتخاب میں ناکامی کے بعد کی صورتحال کا جائزہ بھی لیا جائے گا۔ اس کے ساتھ ساتھ تحریک عدم اعتماد دوبارہ لانے کی صورت میں حکمت پر بھی غور ہوگا۔

اجلاس میں ن لیگ اور پیپلز پارٹی کے مرکزی قائدین شہباز شریف اور بلاول بھٹو نے شرکت نہیں کی۔ شہباز شریف کمر میں تکلیف کے باعث شرکت نہیں کر سکے۔ ڈاکٹر نے انہیں آرام کا مشورہ دیا ہے۔ جبکہ بلاول بھٹو پہلے سے طے شدہ پروگرام کے مطابق گلگت بلتستان کے دورے کے لیے آج صبح ہی اسکردو روانہ ہو گئے ہیں۔ اے پی سی میں شریک تمام جماعتوں نے نیب کی جانب سے حالیہ گرفتاریوں کی بھی مذمت کی۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers