قومی

جارحیت ہوئی تو بھرپور جواب ملے گا۔ آرمی چیف جنرل قمر باجوہ

کسی بھی مس ایڈونچر کو ناکام بنانے کے لیے تیار ہیں۔ جارحیت ہوئی تو بھرپور جواب ملے گا۔ سپہ سالار جنرل قمر جاوید باجوہ کی سرحد پار بیٹھے دشمن کو وارننگ۔ گلگت میں فارمیشن کمانڈنٹ سے خطاب میں کہا کہ مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پرپوری نظر ہے۔ مشرقی سرحد پر ہر خطرے سے آگاہ ہیں۔ انہوں نے محاز جنگ پر جوانوں کے حوصلے کو سراہا۔

فارمیشن ہیڈکوارٹرز کے دورے کے موقع پر آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ ہم مشرقی سرحدوں اور پیش آنے والے تمام خطرات سے بہت اچھے سے واقف ہیں۔ مشرقی محاذ پر کسی بھی خطرے کا مقابلہ کرنے کیلئے تیار ہیں۔ مقبوضہ کشمیرکی موجودہ صورت حال پر بھی پوری نظر ہے۔

آرمی چیف نے سب سے اونچے ترین میدان جنگ میں موسمی چیلنجز اور زمین پر صورتحال کے باوجود جوانوں، ان کے افسروں کی تیاری اور جذبے کو خوب سراہا۔ بولے کہ افواج پاکستان کی تیاریاں اور پیشہ وارانہ مہارت قابل تعریف ہے۔ اتنی مشکلات کے باوجود بھی جوانوں کا حوصلہ بلند ہے۔

سپہ سالار نے کہا کہ ہم کسی بھی مس ایڈونچر کو ناکام بنانے کیلئے پوری طرح تیار ہیں۔ کسی بھی جارحیت کا منہ توڑ جواب دیں گے۔ فارمیشن ہیڈکوارٹر گلگت پہنچنے پر آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے یادگار شہدا پر پھول بھی چڑھائے۔

آپ کو بتاتے چلیں کہ اس سے پہلے 21 اگست کو پاک فوج کے سپہ سالار آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے اتحاد تنظیمات مدارس کے طلبا کی ملاقات بھی ہوئی تھی۔ اس موقع پر آرمی چیف کا کہنا تھا کہ دینی مدارس کو قومی دھارے میں لانے کی کوشش کے مثبت اثرات ہوں گے۔ طلبا نے امتحانات میں نمایاں پوزیشنز حاصل کی تھیں۔ آرمی چیف نے طلبا کو نمایاں پوزیشنز حاصل کرنے پر مبارک باد بھی دی تھی۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers