بین الاقوامی

پاکستان کا بھارت کے لیے اپنی فضائی حدود بند کرنے کا امکان

کشمیریوں پر مظالم پر پاکستان کا ری ایکشن۔ بھارت کے لیے پاکستان کی فضائی حدود اور زمینی راستے بند کرنے پر غور۔ وفاقی وزیر فواد چوہدری نے کہا کہ شروعات مودی نے کی ختم ہم کریں گے۔ وفاقی کابینہ کا جمعے کو ملک بھر میں یوم احتجاج منانے کا فیصلہ۔

گزشتہ روز وزیر برائے سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے اپنے ٹوئٹر پیغام میں کہا کہ وزیراعظم عمران خان بھارت کے لیے پاکستان کی فضائی حدود اور زمینی راستے بند کرنے کا سوچ رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کابینہ کے اجلاس میں مکمل طور پر پاکستان کی فضائی حدود اور وہ تمام زمینی راستے جس سے بھارت افغانستان اور اس سے آگے دیگر ممالک سے تجارت کرتا ہے وہ بند کرنے کا سوچ رہے تھے۔ ان فیصلوں کے لئے قانونی رسمی کاروائیاں زیر غور ہیں

 

 

انہوں نے مزید کہا کہ مودی نے شروعات کی مگر ختم اب ہم کریں گے۔ بھارت نے جو راستہ اختیار کیا ہے پاکستان اب اسی زبان میں اس کا جواب دے گا۔

جبکہ دوسری جانب فضائی حدود کی پابندی سے متعلق وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ فضائی حدود کی بندش سے متعلق حتمی فیصلہ ابھی نہیں ہوا۔ وزیراعظم تمام تفصیلات کے بعد فضائی حدود بند کرنے کا فیصلہ کریں گے۔

اس کے علاوہ وزیر ہوابازی غلام سرور خان کہتے ہیں کہ ائیر سپیس روکنے کے حوالے سے فیصلہ آئندہ 48 گھنٹوں میں متوقع ہے۔ آپ کو بتاتے چلیں کہ بھارت کے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت بدلنے کے سفاکانہ اقدام پر پاکستان پہلے بھارت سے تجارت، سمجھوتہ ایکسپریس اور دوستی بس معطل کر چکا ہے۔

اس کے علاوہ مقبوضہ کشمیر میں مظلوم مسلمانوں سے اظہار یکجہتی کے لیے وفاقی کابینہ اور وزیراعظم عمران خان نے جمعے کو 00 :12 سے 12:30 تک ملک بھر میں بھارتی مظالم کے خلاف احتجاج کا فیصلہ کیا ہے۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers