قومیٹیکنالوجی

پاکستانی انجینئرز نے دماغ کے ذریعے کنٹرول کیا جانے والا روبوٹک بازو تیار کر لیا

محمد اویس اور انس نذیر نامی دو پاکستانی انجینئرز نے حال ہی میں مصنوعی بازو تیار کیا ہے (جو مصنوعی جسم کے اعضاء کی نشاندہی کرتے ہوئے) دماغ کے ذریعے کمانڈ دے کر کنٹرول کیا جاسکتا ہے۔ مصنوعی اعضاء مصنوعی یا کاسمیٹک وجوہات یا دونوں کے لئے تیار کیا گیا ہے۔ جوڑوں کے لئے مخصوص مصنوعی اعضاء گھٹنے، کہنی، ٹخنوں اور انگلی کے جوڑ ہیں۔

دو پاکستانی انجینئرز نے یونیورسٹی کے ایک پروجیکٹ کے دوران بائیو روبوٹکس پر کام کرنا شروع کیا۔

ایک حالیہ رپورٹ کے مطابق ان دونوں انجینئرز نے اپنے حال ہی میں شروع کیے گئے پروجیکٹ کے ذریعے 30 سے ​​زائد معذور افراد کی مدد کی ہے دماغ کے ذریعے منتقل ہونے والے اشاروں کے جواب میں پروٹوٹائپ کی انگلیاں اور ہاتھ کی حرکت ہوتی ہے۔ روبوٹک بازو کی لاگت تقریباً 2 ہزار ڈالر بتائی جاتی ہے، جو تقریباً تین لاکھ روپے ہے۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers