بزنسبین الاقوامیٹیکنالوجی

فیس بک کے بعد ٹیلیگرام کا ‘گرام’ کریپٹوکرنسی بنانے کا منصوبہ

ایک سال تک رازداری سے کام کرتے ہوئے، ٹیلیگرام میسجنگ سروس اپنے نئے پروجیکٹ ‘گرام’ کے ساتھ ایک کریپٹوکرنسی لانچ کرنے کی دوڑ میں سرگرم ہے۔

گرام کے بارے میں بہت کم جانا جاتا ہے لیکن میڈیا رپورٹس میں کہا گیا ہے کہ روسی قائم کردہ ٹیلیگرام کا مقصد ایک قابل رسائی خدمت پیدا کرنا ہے جس کا استعمال بٹ کوائن جیسے مختلف کریپٹو کرنسیوں سے زیادہ آسان ہے جو اب بھی ایک نسبتاً چھوٹی منڈی تک محدود ہے۔

آن لائن لیک ہونے والی ایک دستاویز میں ٹیلیگرام نے کہا ہے کہ وہ عام لوگوں کی روزمرہ زندگی میں قیمت کے مستقل تبادلے کے لئے استعمال ہونے والا ایک معیاری کریپٹوکرنسی بنانا چاہتا ہے۔

دستاویز کے مطابق انکرپٹڈ میسنجر محفوظ اور تیز ادائیگی کے نظام کا تصور کرتا ہے جس کا مقصد ایک نئی معیشت کے لئے ویزا اور ماسٹر کارڈ کا متبادل بننا ہے۔

فیس بک نے 2020ء میں کریپٹوکرنسی ‘لبرا’ لانچ کرنے کا اعلان کیا ہے.

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers