بین الاقوامی

پاکستان کا بھارتی صدر کو فضائی حدود استعمال کی اجازت دینے سے انکار

پاکستان نے بھارت کو اپنی فضائی حدود استعمال کرنے سے انکار کر دیا۔ بھارتی صدر نے اپنی فلائٹ کے لیے پاکستان سے اس کی ائیر اسپیس استعمال کرنے کی درخواست کی تھی۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ بھارت کے موجودہ رویے کو مدنظر رکھتے ہوئے پاکستان نے ان کے صدر کو اپنی ائیر اسپییس استعمال نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ بھارتی صدر کے لیے پاکستان کی فضائی حدود بند کر دی گئی ہے۔

بھارت کی عام پروازوں کے لیے پاکستان کی فضائی حدود کھلی ہے۔ ایسٹ اور ویسٹ کی جانب سے چلنے والی فلائٹس اپنے معمول پر رواں ہیں۔ خاص پروازوں کے لیے کسی ملک کی فضائی حدود استعمال کرنے کے لیے متعلقہ ملک سے اجازت درکار ہوتی ہے اور اسی سلسلے میں گزشتہ روز بھارتی صدر کے لیے بھارتی حکام نے پاکستان کی فضائی حدود استعمال کرنے کی اجازت مانگی تھی تاکہ وہ اپنے دورہ آئس لینڈ کے لیے پاکستان کی حدود سے گزر سکیں۔

بھارت کے حالیہ رویے اور کشمیریوں پر ڈھائے جانے والے ظلم کو مدنظر رکھتے ہوئے پاکستان نے اجازت دینے سے انکار کر دیا۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے اس بات کی تصدیق کر دی ہے۔ اب بھارتی صدر پاکستان کی فضائی حدود سے نہیں گزر سکتے اور بھارتی حکام کو پاکستانی فیصلے کی اطلاع دے دی گئی ہے۔

آپ کو بتاتے چلیں کہ کچھ روز قبل بھی بھارتی وزیراعظم نریندر مودی نے شنگھائی کوپریشن کے اجلاس میں جانے کے لیے پاکستان کی فضائی حدود استعمال کرنے کی درخواست کی تھی جو کہ پاکستان نے اپنا سفارتی اور اخلاقی فرض نبھاتے ہوئے قبول کر لی تھی۔ مگر بعد میں نریندر مودی براستہ سری لنکا شنگھائی گئے تھے جس پر بھارت نے کافی واویلا مچا کر پاکستانی ساکھ متاثر کرنے کی کوشش کی تھی۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers