قومی

گزشتہ روز شہید ہونے والے جوان کی نماز جنازہ ادا کر دی گئی

حوالدار ناصر حسین شہید کی نماز جنازہ نارووال میں ان کے آبائی گاؤں فسیح پور میں ادا کر دی گئی۔ نماز جنازہ میں 115 بریگیڈ سیالکوٹ کے برگیڈئیر غازی کمال احمد سمیت سیاسی اور سماجی شخصیات نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔

میں نماز جنازہ میں ڈپٹی کمشنر ،ڈی پی او، مسلم لیگ ن کے رہنماء احسن اقبال نے بھی شرکت کی۔ شہید کوفوجی اعزاز کے ساتھ آبائی قبرستان میں سپردِخاک کردیا گیا۔

شہید کی میت آبائی گاؤں پہنچنے پر فضا نعرہ تکبیر اللہ اکبر اور پاک فوج زندہ باد کے نعروں سے گونج اٹھی۔ اہلخانہ اور علاقہ مکینوں نے پھولوں کی پتیوں سے شہید کا استقبال کیا۔ پاک آرمی کے دستے نے سلامی بھی دی اور قبر پر پھولوں کی چادر بھی چڑھائی۔

شہید نے سوگواران میں 3 بیٹیاں اور ایک بیٹا چھوڑا۔ شہید کی بیٹیوں کا کہنا تھا کہ انہیں اپنے والد کی شہادت پر فخر ہے۔

آپ کو بتاتے چلیں کہ گزشتہ روز حاجی پیر سیکٹر پہ بھارتی فوج کی جانب سے بلا اشتعال فائرنگ سے حوالدار ناصر حسین شہید ہو گئے تھے۔ آئی ایس پی آر کے مطابق 33 سالہ ناصر نارووال کے رہائشی تھے۔ وہ 16 سال سے فوج میں خدمات سرانجام دے رہے تھے۔ ان کا تعلق نارووال کے قریبی گاؤں فسیح پور سے تھا۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers