بین الاقوامی

وزیراعظم عمران خان آج طورخم بارڈر کا افتتاح کریں گے

پاکستان اور افغانستان کے تجارتی تعلقات کا نیا دور۔ آج سے طورخم بارڈر 24 گھنٹے کھلا رہے گا۔ وزیراعظم عمران خان پاک افغان بارڈر دورہ کریں گے۔

صوبہ خیبرپختونخواہ میں واقع طورخم بارڈر کا آج وزیراعظم عمران خان باضابطہ افتتاح کریں گے۔  اب سے دونوں ممالک میں دو طرفہ تجارت ہفتے میں ساتوں دن 24 گھنٹے ہوا کرے گی۔

ذرائع کے مطابق افغانستان سے تین رکنی وفد بھی تقریب میں شرکت کیلئے پشاور پہنچ گیا ہے۔ افغانستان سے وفد میں افغان گورنر ننگرھار، افغان وزیر ٹرانسپورٹ اور افغان سفیر شامل ہیں۔

تقریب میں گورنر خیبر پختونخوا شاہ فرمان، وزیراعلیٰ محمود خان اور ارباب شہزاد سمیت دیگر وزراء بھی عمران خان کے ساتھ ہوں گے۔

ذرائع کے مطابق طورخم بارڈر پر کسٹم اور دیگر اداروں نےانتظامات مکمل کر لیے ہیں۔  وزیراعلیٰ محمود خان طورخم بارڈر پہنچ گئے ہیں۔ انہوں نے صوبائی وزیراطلاعات شوکت یوسفزئی کے ساتھ انتظامات کا معائنہ بھی کیا۔

آپ کو بتاتے چلیں کہ کل بھی وزیر اعلیٰ کے پی محمود خان نے طور خم بارڈر کا ہنگامی دورہ کر کے وہاں سرحد کو 24 گھنٹے کھولنے سے متعلق انتظامات کا جائزہ لیا تھا۔

گزشتہ روز میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعلٰی خیبر پختونخواہ کا کہنا تھا کہ درہ خیبر کا مقام صدیوں سے تجارتی مرکز رہا ہے۔ پاک افغان سرحد کھولنے سے پاکستانی برآمدات میں اضافہ ممکن ہوگا۔ ہماری حکومت کی خواہش ہے کہ تجارتی روابط کو مزید فروغ دیا جائے۔

پاک افغان طورخم بارڈر کو کھلا رکھنے سے تجارتی حجم میں اربوں روپے کے منافع کی توقع ہے۔ اس عمل سے وسطی ایشیا تک تجارتی سرگرمیاں  فروغ پائیں گی۔

ذرائع کے مطابق سرحد کھلی رکھنے کے عمل میں سہولت فراہم کرنے کے لیے صوبائی حکومت کی جانب سے 79 ملین روپے فراہم کیے گئے تھے۔

دونوں اطراف سے کاؤنٹرز کی تعداد 16 سے بڑھا دی گئی ہے۔ ایمیگریشن اور کسٹم حکام کی تعداد بھی اضافہ کیا گیا ہے۔ جبکہ عوام کے لیے پیدل راہ داری پر بھی کام ہوا ہے۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers