قومی

نیب سکھر نے خورشید شاہ کو گرفتار کر لیا

سندھ میں ایک اور بڑی گرفتاری۔ آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں ایک اور جیالہ پکڑا گیا۔ پیلپلز پارٹی کے رہنماء خورشید شاہ کو گرفتار کر لیا گیا۔ نیب سکھر نے خورشید شاہ کو اسلام آباد سے گرفتار کر لیا۔ خورشید شاہ بنی گالہ میں اپنے دوست کے گھر موجود تھے۔

بریکنگ نیوز: خورشید شاہ کو نیب سکھر کی ٹیم نے اسلام آباد سے گرفتار کر لیا

بریکنگ نیوز: خورشید شاہ کو نیب سکھر کی ٹیم نے اسلام آباد سے گرفتار کر لیا

Posted by Aap News on Wednesday, September 18, 2019

 

رہنماء پیپلز پارٹی اور سابق اپوزیشن لیڈر قومی اسمبلی خورشید شاہ پر غیر قانونی طور پر جائیدادیں اپنے نام کروانے، ہوٹل، پٹرول پمپ اور بنگلے اور اس طرح کی بے نامی جائیدادیں  بنانے کا الزام ہے۔

ابتدائی تحقیقات میں یہ الزامات ثابت ہوئے اور اس کے بعد مزید تحقیقات بھی جاری تھی۔ نیب سکھر نے خورشید شاہ کو آج طلب کر رکھا تھا لیکن انہوں نے آج معذرت کی تھی۔

نیب ذرائع کے مطابق ملک کے تقریباً 15 سے 20 شہروں کے ڈپٹی کمشنرز کو خطوط لکھے گئے ہیں۔ اور اس حوالے سے معلومات اکٹھی کی جا رہی ہیں کہ خورشید شاہ کی کہاں کہاں جائیدادیں ہیں۔ نیب کو اس حوالے سے کچھ ڈپٹی کمشنرز سے جوابات بھی موصول ہو چکے ہیں۔

اسی طرح 50 سے زائد محکموں کو بھی اس حوالے سے خطوط لکھے گئے ہیں جن میں ایف بی آر، ایکسائز جیسے مختلف محکمے شامل ہیں۔ خورشید شاہ کی آمدن کے ذرائع اور جائیدادوں کے حوالے سے مزید معلومات بھی اکٹھی کی جارہی ہے۔

ابتدائی تحقیقات میں یہ ثابت ہوا ہے کہ خورشید شاہ نے ہوٹل، پٹرول پمپس اپنے فرنٹ مین کے نام پہ بنائے ہوئے ہیں۔

آپ کو بتاتے چلیں کہ خورشید شاہ کے خلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات کا کیس ہے۔ ان کے خلاف انکوائری 7 اگست کو شروع کی گئی تھی۔ اس کے بعد نیب سکھر نے انہیں 3 ستمبر کو طلب کیا تھا۔ اس کے بعد 13 ستمبر کو ان کو دوسری مرتبہ طلب کیا گیا تھا۔ 13 تاریخ کو خورشید شاہ تسلی بخش جواب جمع نہیں کروا سکے تھے۔

تحقیقت کا دائرہ خورشید شاہ سمیت ان کے خاندان کے 11 افراد تک وسیع ہے۔ جس میں ان کے بیٹے فاروق شاہ اور اویس شاہ بھی شامل ہیں۔ فاروق شاہ اور اویس شاہ دونوں رکن سندھ اسمبلی بھی ہیں۔ ان کے علاوہ خورشید شاہ کی دو بیویاں اور بیٹیاں بھی تحقیقات میں شامل ہیں۔

آپ نیوز نے خورشید شاہ کی جائیدادوں کی تفصیل حاصل کر لی۔ خورشید شاہ اور ان کے خاندان کے مختلف شہروں میں 105 اکاؤنٹس ہیں۔ خورشید شاہ نے فرنٹ میین کے نام پر تراسی جائیدادیں بنا رکھی ہیں۔ خورشید شاہ پر 500 ارب روپے کی کرپشن کا الزام ہے۔ خورشید شاہ کو کل احتساب عدالت سکھر میں پیش کیا جائے گا۔

Comment here

instagram default popup image round
Follow Me
502k 100k 3 month ago
Share