قومی

نیب ٹیم کا سابق ڈی جی پارکس لیاقت قائم خانی کے گھر پر چھاپہ

جعلی اکؤنٹس کیس کی تحقیقات میں اہم پیشرفت۔ نیب ٹیم کا سابق ڈی جی پارکس لیاقت قائم خانی کے گھر پر چھاپہ۔ کروڑوں روپے مالیت کی 8 لگژری گاڑیاں، جدید اسلحہ اور اہم دستاویزات برآمد۔

جعلی اکاؤنٹس کیس میں تحقیقات کرتے ہوئے نیب راولپنڈی نے اسلام آباد میں رہائش پذیر کراچی کے سابق ڈی جی پارکس لیاقت قائم خانی کے گھر پر چھاپہ مارا۔

جعلی اکاؤنٹس کیس میں مبینہ طور پر ملوث کے ایم سی کے سابق ڈی جی پارکس لیاقت علی خان کوگزشتہ روز کراچی سے گرفتار کیا گیا تھا۔
چھاپے کے دوران گھر میں کروڑوں روپے کی مالیت کی گاڑیاں سامنے آئیں ہیں۔ گاڑیوں میں مرسڈیز بینز،لینڈ کروزر، ہائی لکس ،فارچونر اور رینج روور بھی شامل ہیں۔

اس کے علاوہ جدید ترین اسلحہ بھی برآمد ہوا ہے۔ ذرائع کے مطابق لیاقت علی کے گھر سے کلُ 243 چیزیں برآمد ہوئی ہیں۔ گھر سے مہران ٹاؤن کے 20 پلاٹوں کی فائلیں بھی ملیں ہیں۔ چھاپے میں ڈالرز، ریال، درہم، سونے کے زیورات اور بانڈز بھی برآمد کئے گئے ہیں۔

ان کے گھر سے 4 بائی 6 فٹ کے 2 لاکر ز بھی پکڑے گئے ہیں جنہیں ابھی تک کھولا نہیں جاسکا ہے۔ لیاقت قائم خانی کے ذاتی سامان میں سے سونے کے بٹن اور کف لنکس بھی پائے گئے ہیں۔

نیب ذرائع کے مطابق اس گھر کے دروازے ریموٹ کنٹرول سے کھلتے ہیں اورگھر کے اندر باتھ روم 2 مرلے پرمحیط ہیں۔ نیب نے سابق ڈی جی پارکس پر الزام عائد کیا ہے کہ لیاقت علی نے تمام اثاثے کرپشن سے بنائے ہیں۔ ان کا رہن سہن ان کی آمدن سے مطابقت نہیں رکھتا۔ کرپشن سے بنائی گئی تمام اثاثوں کی تفصیلات قبضے میں لے لی گئیں ہیں۔

لیاقت قائم خانی پر بطور ڈی جی پارکس جعلی ٹھیکے دینے کا الزام ہے۔ ملزم باغ ابن قاسم کی غیر قانونی الاٹمنٹ کے مرکزی کردار بھی ہیں۔

آپ کو بتاتے چلیں کہ جعلی اکاؤنٹس کیس میں اب تک مجموعی طور پر گرفتاریوں کی تعداد 45 ہو گئی ہے۔ اس پہلے گزشتہ روز سکھر نیب نے خورشید شاہ کو اسلام آباد سے گرفتار کیا تھا۔

رہنماء پیپلز پارٹی اور سابق اپوزیشن لیڈر قومی اسمبلی خورشید شاہ پر غیر قانونی طور پر جائیدادیں اپنے نام کروانے، ہوٹل، پٹرول پمپ اور بنگلے اور اس طرح کی بے نامی جائیدادیں بنانے کا الزام ہے۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers