بین الاقوامی

وزیراعظم کی سعودی فرمانروا اور ولی عہد سے اہم ملاقات۔

وزیراعظم کی سعودی فرمانروا شاہ سلمان اور ولی عہد محمد بن سلمان سے اہم ملاقات۔ شاہ سلمان کا مسٔلہ کشمیر پر پاکستان کی حمایت کا اعادہ۔ عمران خان نے آئل تنصیبات پر حملے کو معیشیت کے لیے بڑا خطرہ قرار دے دیا۔ عمران خان نے بزنس کمیونیٹی اور پی ٹی آئی کارکنوں سے بھی ملاقات کی۔ کہا کہ مسٔلہ کشمیرہر فورم پر اٹھائیں گے۔

جدہ میں وزیراعظم پاکستان عمران خان نے سعودی فرماں روا سے ملاقات کی۔ملاقات میں دو طرفہ تعاون کو مزید بڑھانے پر بات چیت کے ساتھ باہمی دلچسپی کے امور، تجارت، سرمایہ کاری اور اقتصادی تعلقات پر تبادلہ خیال ہوا۔

 

 

وزیراعظم نے شاہ سلمان کو مقبوضہ کشمیر کی تازہ ترین صورتحال سے بھی آگاہ کیا۔ شاہ سلمان نے مسئلہ کشمیر پر پاکستان کی حمایت اور یکجہتی کا اعادہ بھی کیا۔

وزیراعظم نے بھی کہا کہ پاکستان حرمین شریفین کے تقدس اور سلامتی کو خطرہ درپیش ہونے کی صورت میں سعودی عرب کے ساتھ کھڑے ہو گا۔

وزیر اعظم نے سعودی فرمانروا سے سعودی تیل کی تنصیبات پر حملے کہ مذمت بھی کی اور اس کو معیشیت کے لیے بڑا خطرہ بھی قرار دیا۔

عمران خان کی سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان سے بھی ملاقات ہوئی۔ ملاقات کے دوران باہمی دلچسپی اور دوطرفہ تعلقات پر گفتگو ہوئی۔

اس موقع پر وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی،مشیر خزانہ حفیظ شیخ، سید ذوالفقار بخاری اور دیگر بھی موجود تھے۔
اس سے پہلے جدہ کے شاہی ٹرمینل پر پہنچنے پر شہر مکہ کے گورنرخالد الفیصل بن عبد العزیز نے عمران خان کا استقبال کیا۔

وزیراعظم نے سعودی عرب میں مقیم پاکستانیوں سے ملاقات کے دوران ان کو بتایا کہ ہمیں قرضوں کے بوجھ میں ڈوبی معیشت ورثے میں ملی تھی۔ اب ہر شعبے میں اصلاحات لا رہے ہیں۔

ملک میں سرمایہ کاری لانے کے لیے جدید اصلاحات لارہے ہیں۔ کاروبار میں آسانیاں پیدا کی جارہی ہیں۔ اس کے علاوہ انہوں نے کہا کہ ہم مسٔلہ کشمیرہر فورم پر اٹھائیں گے۔

آپ کو بتاتے چلیں کہ وزیراعظم عمران خان سعودی عرب کے دو روزہ دورے پر گئے تھے۔ آج وہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں شرکت کے لیے امریکا روانہ ہوں گے۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers