قومی

وزیر اعلیٰ مراد علی شاہ نے نیب میں پیشی سے معذرت کر لی

وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ کی نیب میں پیش ہونے سے معذرت۔ کہا کہ پیشی کا نوٹس تاخیر سے ملا کوئی اور دن بلا لیں۔ نیب کو خط میں مؤقف۔ نیب راولپنڈی نے وزیراعلیٰ کو کل طلب کر رکھا ہے۔

نیب نے 24 ستمبر بروز منگل کو راولپنڈی میں طلب کر رکھا ہے لیکن وزیر اعلیٰ سندھ نے خط لکھ کہ کہا ہے کہ وہ کل نیب میں پیش نہیں ہوں گے۔

خط میں وزیراعلیٰ مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ 24 ستمبر کی طلبی مختصر وقت میں ممکن نہیں لہذا نئی تاریخ دی جائے۔ اس کے علاوہ مقدمے کا سوالنامہ ارسال کر دیا جائے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ طلبی کا نوٹس تاخیر سے ملا تھا۔ وقت بہت کم تھا۔

ذرائع کے مطابق نیب کی تفتیشی ٹیم نے مراد علی شاہ کے خط کے بعد اپنی حکمت عملی پر غور شروع کر دیا ہے۔  نیب پنڈی نے مراد علی شاہ کو 17 ستمبر کو نیب کراچی میں طلب کیا تھا اس وقت بھی وزیراعلٰی سندھ پیش نہیں ہوئے تھے۔ آپ کو بتاتے چلیں کہ نیب نے ٹھٹھہ اور دادو شوگر ملزتحقیقات میں مراد علی شاہ کو طلب کیا تھا۔

آپ کو بتاتے چلیں کہ نیب نے  پیپلز پارٹی کے رہنماء خورشید شاہ کو بھی اسلام آباد سے گرفتار کر رکھا ہے۔ خورشید شاہ بنی گالہ میں اپنے دوست کے گھر موجود تھے۔

رہنماء پیپلز پارٹی اور سابق اپوزیشن لیڈر قومی اسمبلی خورشید شاہ پر غیر قانونی طور پر جائیدادیں اپنے نام کروانے، ہوٹل، پٹرول پمپ اور بنگلے اور اس طرح کی بے نامی جائیدادیں بنانے کا الزام ہے۔

 

Comment here

instagram default popup image round
Follow Me
502k 100k 3 month ago
Share