بین الاقوامی

جنرل اسمبلی میں پاکستان کا بھارت کو جواب الجواب

اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں پاکستان کا بھارت کوجواب الجواب۔ پاکستانی مشن اہلکار ذوالقرنین چھینہ نے کہا کہ بھارتی حکومت آر ایس ایس نظریے کو آگے بڑھا رہی ہے۔ مہاتمہ گاندھی کے قاتل سیکولر بھارت کی دھجیاں اڑا رہے ہیں۔ مودی سرکار کشمیریوں کو بولنے کی اجازت دینے سے کیوں گھبرا رہی ہے؟

بھارتی نمائندوں نے وزیراعظم عمران خان کی اقوام متحدہ میں تقریر کا بھونڈا جواب دیا۔ بھارتی نمائندوں کو جواب دیتے ہوئے پاکستانی مشن کے سفارتکار ذوالقرنین چھینہ نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے دنیا کے سامنے بھارتی ریاستی دہشت گردی کا حقیقی اور ظالمانہ چہرہ بے نقاب کیا ہے۔

پاکستانی سفارتکار نے جواب الجواب میں مؤقف اختیار کیا کہ بھارت 30 سال سے مقبوضہ کشمیر میں مظالم ڈھا رہا ہے۔ مودی سرکار کشمیریوں کو بولنے کی اجازت دینے سے کیوں گھبرا رہی ہے؟

مزید کہا کہ بھارت 30 سال سے مقبوضہ کشمیر میں دہشت گردی کر رہا ہے۔ ذوالقرنین چھینہ نے سوال اٹھایا کہ بھارت کااقدام اگر کشمیریوں کی فلاح کے لیے ہے تو کرفیو کیوں نہیں ہٹاتا۔

اس کے علاوہ بولے کہ بھارتی جاسوس کلبھوشن نے پاکستان میں دہشت گردی کا اعتراف کیا جو کہ ایک ناقابل تردید ثبوت ہے۔

بھارتی حکومت آر ایس ایس کے نظریئے کو آگے بڑھا رہی ہے۔ مہاتما گاندھی کے قاتل سیکولر بھارت کی دھجیاں اڑا رہے ہیں۔

آپ کو بتاتے چلیں کہ وزیراعظم عمران خان نے اقوام متحدہ کے اجلاس میں کشمیریوں کا مقدمہ بھرپور انداز میں لڑا۔ انہوں نے پوری دنیا میں مودی اور آر ایس ایس کا پردہ چاک کیا۔ اس کے علاوہ پوری دنیا کو کشمیر میں ہونے والی بھارتی بربریت اور مظالم سے آگاہ کیا۔ وزیراعظم پوری دنیا میں کشمیر کے سفیر بن کر ابھرے ہیں۔ ویلکم ہوم پی-ایم آئی کے سماجی رابطے کی ویبسائٹ ٹویٹر پر ٹاپ ٹرینڈ بن گیا ہے۔ ان کا تاریخی خطاب دنیا بھر میں قابل ستائش قرار دیا جا رہا ہے۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers