بزنسبین الاقوامی

پاکستان میں سرمایہ کاری نہ آنے کی وجہ کرپشن ہے: وزیراعظم عمران خان

کرپشن سے نجات چین کی ترقی کا باعث بنی۔ وزیراعظم عمران خان کا پاک چین سرمایہ کاری کانفرنس سے خطاب۔ کہا کہ پاکستان میں سرمایہ کاری نہ آنے کی وجہ کرپشن ہے۔ سی پیک منصوبے کے لیے اتھارٹی قائم کر دی ہے۔ وزیراعطم آفس کی جانب سے چینی سرمایہ کاروں کو بھی تحفظ کی یقین دہانی۔

https://youtu.be/jcv8–piI5M

 

وزیراعظم عمران خان اس وقت چین کے سرکاری دورے پر ہیں جہاں پاکستان اور چین میں تجارت اور سرمایہ کاری کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ چین کی طرح ہم بھی اپنی غلطیوں سے سبق سیکھ رہے ہیں۔

چین نے 7 کڑور لوگوں کو غربت کی لکیر سے باہر بکالا۔ چین دنیا کا تیز ترین ترقی کرنے والا ملک ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ چائنہ نے اپنے ملک میں لوگوں کو کھل کر سرمایہ کاری کرنے کی اجازت دی، انہوں نے بزنس کو فروغ دیا اور اس سے حاصل ہونے والی آمدن کو پھر غریبوں میں بانٹا اور اب پاکستان میں بھی ہم یہی کرنا چاہتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ، صدر شی جنگ پنگ نے بدعنوانی کے خلاف ایک بڑی جنگ لڑی، میری سماعت کے مطابق چائنہ نے 400 کے قریب وزرا کی سطح پر لوگوں کو حوالات بھیجا۔ چینی صدر کے اقدامات سے بہت کچھ سیکھنے کو ملا۔

انہوں نے مزید کہا کہ کرپشن کی وجہ سے ملک کی ترقی کی رفتار کم ہو جاتی ہے اور دنیا وہیں سرمایہ کاری کرتی ہے جہاں کرپشن نہ ہو۔ ماضی میں پاکستان دنیا میں تیزی سے بڑھتی ہوئی معیشت تھی۔

بولے کہ پاکستان میں سرمایہ کاری نہ آنے کی ایک بڑی وجہ کرپشن ہے۔ کاش میں بھی 500 افراد کو چینی صدر کی طرح جیل بھیج سکتا۔

انہوں نے مزید کہا کہ پہلے چین پاکستان سے سیکھ رہا تھا اور اب پاکستان چین سے سیکھ رہا ہے۔ پاکستان میں کرپشن پر قابو پانے میں کچھ وقت لگے گا۔

پاکستان میں کاروبار کے لیے آسانیاں پیدا کر رہے ہیں۔ پاکستان میں امن و امان کی صورتحال بہتر ہوئی ہے۔ اسی وجہ سے سی پیک اتھارٹی عمل میں لائی گئی ہے۔ سی پیک اتھارٹی تمام مسائل کو دیکھے گی۔ ہم چاہتے ہیں پاکستان میں سرمایہ کاروں کو منافع ملے۔

بولے کہ پاکستان میں سرمایہ کی 5 اہم وجوہات ہیں۔ ایک پاکستان کامحل وقوع اور دوسرا پاکستانی آبادی اہمیت کی حامل ہے۔ تیسرا ہم چین کے سرمایہ کاروں کی حوصلہ افزائی کریں گے۔ چوتھا تیل و گیس ہے جبکہ پانچواں یہ کہ ہم ہاؤسنگ کے شعبے میں سرمایہ کاری کو سراہیں گے۔

گوادر پورٹ کیلئے رعایات کی منظوری دے دی گئی۔  گوادر فری زون بننے کے قریب ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ گوادر ایئرپورٹ بھی مکمل ہے۔ دنیا میں پاکستان کی جغرافیائی حیثیت انتہائی اہمیت کی حامل ہے۔

کہا کہ چینی شہریوں کیلئے سپیشل فورس بنائی گئی ہے۔ ویزہ جاری کرنے کے حوالے سے سہولتیں پیدا کی ہیں۔ چائنہ کے ساتھ اگلے فیز میں فری ٹریڈ کا معاہدہ کر رہے ہیں۔ حکومت اسپیشل اکنامک زونز پر توجہ دے رہی ہے۔ پاکستان چاہتا ہے کہ چین کوئلے اور سونے کی صنعت میں بھی سرمایہ کاری کرے

 

 

 

 

 

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers