قومی

کرتار پور راہداری اپنے مقررہ وقت پر کھولی جائے گی: ڈاکٹر فیصل

کشمیر میں کرفیو کا 67واں روز ہے، بھارتی افواج نے مزید 2 کشمیریوں کو شہید کر دیا۔ ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر فیصل کی ہفتہ وار میڈیا بریفنگ۔ کہا کہ امریکی سینیٹرز نے آزاد کشمیر اور ایل او سی کا دورہ کیا۔ بولے کرتار پور راہداری اپنے مقررہ وقت پر کھولی جائے گی۔ سابق بھارتی وزیراعظم منموہن سنگھ کو باقاعدہ دعوت بھی دے دی گئی ہے۔

ہفتہ وار بریفنگ کے دوران دفتر خارجہ کے ترجمان ڈاکٹر فیصل کا کہنا تھا کہ کشمیر میں کرفیو کا 67واں روز ہے۔ آج بھارتی افواج نے مزید 2 کشمیریوں کو شہید کر دیا ہے۔ لوگ بدستور بھارتی بربریت کی وجہ سے مسائل کا شکار ہیں۔ مظلوم کشمیریوں کی آواز دنیا بھر میں سنی جارہی ہے۔ کشمیری عوام دواؤں، علاج، خوراک اور مواصلات سے محروم ہیں۔

مزید کہا کہ امریکی سینیٹرز نے آزاد کشمیر اور ایل او سی کا دورہ کیا ہے۔ سینیٹرز کی آمد اور کشمیر کا دورہ خوش آئند ہے۔ انہوں نے کشمیری قیادت سے ملاقاتیں بھی کیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ چینی قیادت بھی مقبوضہ کشمیر پر پاکستان کے مؤقف کی حامی ہے۔ پاکستان ہر سطح پریہ معاملہ اٹھا رہا ہے۔ مقبوضہ کشمیر کو جيل ميں بدل دینا نریندرمودی کو مہنگا پڑگيا ہے۔ بھارت اب ديوار سے لگ چکا ہے۔

سیکیورٹی اور اسلحے کی دوڑ پر پاکستان کا مؤقف واضح ہے۔ ہم خطے میں ہتھیاروں کی دوڑ کے خلاف ہیں۔ دنیا خطے کو اسلحے کی دوڑ میں نہ دھکیلے۔ رافیل ہو یا کچھ اور 27 فروری کی طرح دفاع کرنا جانتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کرتار پور راہ داری مقررہ وقت پر کھولی جائے گی۔ سابق بھارتی وزیراعظم منموہن سنگھ کو باقاعدہ دعوت بھی دے دی گئی ہے۔ سفیروں کی تعیناتی قانون اور ضوابط کے مطابق ہوتی ہے۔

انہوں نے یہ بھی بتایا کہ وزیراعظم عمران خان کے دورہ ایران اور سعودی عرب کے امکانات ہیں۔ وزیراعظم کے دورہ سعودی عرب اور ایران کا باضابطہ اعلان ہوگا۔

سارک کونسل کے حوالے سے بات کرتے ہوئے بولے کہ سارک کونسل اجلاس میں بھارت نے اعتراض اٹھایا ہے۔ اس سے خیر کی توقع نہیں۔ سارک سربراہی کانفرنس کے انعقاد کیلئے بھی کام جاری ہے۔ سارک کانفرنس کے جلد انعقاد پر آگاہ کیا جائے گا۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers