قومی

وزیراعظم عمران خان ایران سے وطن واپس پہنچ گئے، کل سعودی جائیں گے

پاکستان اور ایران خطے میں امن کے لیے ایک پیج پر۔ وزیراعظم عمران خان کا  ایرانی صدر حسن روحانی اور سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ ای سے ملاقات میں خلیج میں کشیدگی کے خاتمے پر زور۔ مشاورتی عمل جاری رکھنے پر اتفاق۔ عمران خان ایران کے اہم دورے کے بعد وطن واپس پہنچ گئے۔ کل سعودی عرب جائیں گے۔

وزیراعظم عمران خان رات گئے ایران کا ایک روزہ دورہ کر کے تہران سے واپس آگئے۔ دورے میں انہوں نے خلیج میں کشیدگی کم کرنے کے لیے ثالثکار کا کردار ادا کیا۔ اس سلسلے میں انہوں نے ایرانی صدر حسن روحانی اور سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ ای سے ملاقات بھی کی۔

جاری کردہ اعلامیے کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے خلیجی ممالک کو ممکنہ فوجی تنازع سے بچنے پر زور دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ خلیجی ممالک میں تمام فریقین بات چیت سے مسائل حل کریں۔

اعلامیے میں مزید کہا گیا ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے پاکستان اور ایران کے درمیان تاریخی اور ثقافتی تعلقات کی اہمیت کو اجاگر کیا اور مختلف شعبوں میں باہمی تعاون کے فروغ کا اعادہ بھی کیا۔

گزشتہ روز صدر حسن روحانی نے ثالثی میں اپنا کردار ادا کرنے پر وزیراعظم عمران خان کا شکریہ ادا کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان کے دورہ ایران کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں اور اس دورے کے مثبت اثرات آئیں گے۔

آپ کو بتاتے چلیں کہ یہ وزیراعظم عمران خان کا ایران کا دوسرا دورہ تھا۔ اس سے پہلے وزیراعظم عمران خان اسی سال اپریل میں بھی ایران کا دورہ کر چکے ہیں۔

وزيراعظم ايران کے بعد کل سعودی عرب روانہ ہوں گے۔ دورہ سعودی عرب ميں وہ ايرانی رہنماؤں سے ملاقات پر بريفنگ ديں گے اور ایرانی صدر کا پیغام پہنچائیں گے۔ وزیراعظم عمران خان کی سعودی ولی عہد اور دیگر اعلی حکام سے ملاقات متوقع ہے۔ ان کی ہر ممکن کوشش ہوگی کہ خلیج میں کشیدگی میں کمی آئے۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers