بین الاقوامی

جنگ مہنگی پڑتی ہے، دہشتگردی کرانا سستا پڑتا ہے:بھارتی مشیر سلامتی

بھارت کا دہشتگردی کو بطور ہتھیار استعمال کرنے کا ریاستی سطح پر اعتراف۔ بھارتی مشیر سلامتی اجیت دودل کا پروکسی وار کی افادیت پر لیکچر۔ کہا کہ جنگ مہنگی پڑتی ہے، دہشتگردی کرانا سستا پڑتا ہے۔ آج کے دور میں جنگ سے بہتر دشمن ملک میں دہشتگردی کرانا ہے۔ کیا عالمی برادری اجیت دودل کے دہشتگردی کے درس کا نوٹس لے گی؟

بھارت نے دہشتگردی کو بطور ہتھیار استعمال کرنے کا ریاستی سطح پر اعتراف کر لیا۔ اجیت دودل نے بتایا کہ فاشسٹ مودی کے عزائم کیا ہیں۔ بھارت بتائے کہ کیا کشمیر مین ہونے والی ریاستی دہشتگردی اسی پلان کا حصہ ہے؟

انڈیا کلبھوشن کو کب اپنا دہشتگرد تسلیم کرے گا؟ اس حوالے سے ائیر مارشل (ر) شہزاد چوہدری کا آپ نیوز سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ 1971 اور اس سے پہلے کی بنائی گئی مکتی باہنی اسی پلان کا حصہ تھی۔ انہوں نے جنگ کو پہلے مسلط کیا اور پھر مشرقی پاکستان کو ہم سے الگ کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ اسی طرح بھارت نے ایل ٹی ٹی کو بنا کر سری لنکا بھیجا اور وہاں دہشتگردی کرائی۔ اس کے بعد اسی پلان پر عمل کرتے ہوئے بھارت افغانستان میں پاکستان کے خلاف سازش کر رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پروکسی وار کی اسی سوچ کا جیتا جاگتا ثبوت کلبھوشن یادیو کی شکل میں موجود ہے۔ اجیت دودل کا بیان ان کی نتہا پسند اور جنگی سوچ کی علامت ہے۔ بھارت جنگ کے طریقے ڈھونڈ رہا ہے کہ جنگ کیسے کرنی چاہیے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اجیت دودل کے ذہن میں امن، تجارت، لوگوں کی بھلائی، باہمی دو طرفہ تعلقات جیسی چیزیں ہیں ہی نہیں۔ ان کی سوچ مکمل طور پر جنگ کے قریب گھومتی ہیں۔ ان کی باتیں اسی دیوالیہ سوچ کا حساب ہے کہ جیسے بھارت کے پاس جنگ کے سوا اور کوئی آپشن نہیں۔ بھارت اپنے ہر پڑوس میں دہشتگردی کا کھیل کھیل رہا ہے۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers