بین الاقوامی

سعودی عرب اور ایران بھی بات چیت سے مسٔلے کا حل چاہتے ہیں: عمران خان

صدرٹرمپ نے سعودی عرب اور ایران کے درمیان کشیدگی کے خاتمے کے لیے سہولتکاری کی درخواست کی۔ وزیراعظم عمران خان کا عالمی نشریاتی ادارے کو انٹرویو۔ کہا کہ امریکی صدر جنگ پر یقین نہیں رکھتے۔ سعودی عرب اور ایران بھی بات چیت سے مسٔلے کا حل چاہتے ہیں۔

سعودی عرب میں عالمی نشریاتی ادارے کو انٹرویو دیتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ ڈونلڈ ٹرمپ کی سب سے اچھی بات یہ ہے کہ وہ جنگ پر یقین نہیں رکھتے۔

انہوں نے کہا کہ صدرٹرمپ نے سعودی عرب اور ایران کے درمیان کشیدگی کے خاتمے کے لیے مجھ سے سہولتکاری کی درخواست کی تھی۔ ٹرمپ کے کہنے پر ایران سے بات چیت کا آغاز کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ امريکا اور ايران کا معاملہ پيچيدہ ہے اور جب تک دونوں جانب سے مثبت ردعمل نہیں آتا میں تفصيلات نہيں بتا سکتا۔

سعودی عرب اور ایران بھی بات چیت سے مسٔلے کا حل چاہتے ہیں۔

کشمیر کے حوالے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمير ميں کرفيو ہٹنے کے بعد کشميريوں کے قتل عام کا بڑا کدشہ موجود ہے۔ افسوس ہے کہ عالمی رہنما اس وقت بھارت کے ساتھ تجارت کو انسانوں پر ترجيح دے رہے ہيں۔

مزید کہا کہ حالات مزید بگڑے تو نہ میرے قابو میں ہوں گے اور نہ ہی مودی کے قابو میں رہیں گے۔

آپ کو بتاتے چلیں کہ سعودی عرب اور ایران کے درمیان سہولتکار کا کردار ادا کرنے کے لیے وزیراعظم عمران خان نے سعودی عرب کا دورہ کیا ہے۔

دورے میں انہوں نے سعودی فرمانروا شاہ سلمان اور ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان سے ملاقاتیں بھی کیں ہیں۔

اس سے قبل وزیراعظم عمران خان نے ایران کا دورہ کیا تھا۔ دورے میں انہوں نے ایرانی صدر حسن روحانی اور سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ ای سے ملاقاتیں کیں تھیں۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers