قومی

پرویز خٹک مولانا سے مذاکرات کریں گے مگر مولانا استعفے پر ڈٹ گئے

مارچ چھوڑیں، مذاکرات کریں۔ وزیراعظم نے مولانا کو رام کرنے کی ذمےداری پرویز خٹک کو سونپ دی۔ وزیر دفاع کو مذاکرات کے لیے کمیٹی کی تشکیل کا اختیار بھی دے دیا۔ وزیراعظم کا کہنا تھا کہ احتجاج سب کا حق ہے، ایجنڈا واضح ہونا چاہیے۔

دوسری جانب مولانا فضل الرحمان، وزیراعظم کے استعفے پر بضد، حکومنتی مذاکرات کی پیشکش ،مسترد کر دی۔ کہا کہ نئے انتخابات کرائے جائیں جو بھی نتائج ہوئے قبول ہونگے۔ مولانا کی قومی اداروں کو بھی دھمکیاں۔

گزشتہ روز تحریک انصاف کی کور کمیٹی کے اجلاس میں وزیراعظم عمران خان نے مولانا فضل الرحمان کے مارچ سے نمٹنے کے لیے وزیر دفاع پرویز ختک کو ذمےداری سونپ دی۔

پرویز خٹک کی سربراہی میں 4 رکنی مذاکراتی کمیٹی بنائی گئی ہے جس میں 3 یا 4 مزید نام شامل کیے جانے کا بھی امکان ہے۔ وزیراعظم کا کہنا تھا کہ  احتجاج سب کا حق ہے لیکن ایجنڈا بھی واضح ہونا چاہیے۔

وزیر دفاع پرویز خٹک کا کہنا ہے کہ مولانا فضل الرحمان کو مذاکرات کے ذریعے معاملات حل کرنے ہوں گے اگر بند گلی میں جائیں گے تو پھر کسی کے ہاتھ کچھ نہیں آئے گا۔

مزید کہا کہ پرامن احتجاج سب کا حق ہے لیکن ملک کو نقصان ہوا تو ایکشن لینا پڑے گا۔ مولانا فضل الرحمان اپنا ایجنڈا ہمیں بتائیں۔ ڈکٹیٹر نہ بنیں اور جمہوری انداز اپنائیں۔

بولے کہ پی ٹی آئی نے دھرنے میں اپنے مطالبات سامنے رکھے تھے۔ اگر مولانا مذاکرات نہیں کرنا چاہتے تو یہ ملک کے خلاف سازش ہوگی۔

دوسری جانب مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ ان سے سے مذاکرات کے لئے کوئی رابطہ نہیں کیا گیا۔ انہون نے مذاکرات کی پیشکش کو رد کر دیا۔

کہا کہ وزیراعظم کے استعفے تک مذاکرات نہیں ہوں گے۔ اب اگر حکومت سے رابطہ ہوا بھی تو اپوزیشن کے ساتھ ہو گا۔

انہوں نے مزید کہا کہ  پوری قوم کی ایک ہی آواز ہے کہ نئے الیکشن کرائے جائیں۔ انتخابات کے بعد جو بھی نتائج ہوں گے اور جو بھی جیتے گا،  ہم وہ نتائج قبول کریں گے۔

اداروں سے مخاطب ہو کر انہوں نے کہا کہ ہم اداروں سے تصادم نہیں چاہتے لیکن میں اداروں کو بتانا چاہتا ہوں کہ اگر مارشل لاء کی کوشش کی گئی تو آزادی مارچ کا رخ ان کی طرف موڑ دیا جائے گا۔

آپ کو بتاتے چلیں کہ معاشی بدحالی اور جنرل الیکشن میں دھاندلی کو بنیاد بنا کر مولانا فضل الرحمان نے 27 اکتوبر کو حکومت کے خلاف اسلام آباد کی جانب مارچ شروع کرنے کا اعلان کررکھا ہے۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers