قومی

پی ایس 11 کے ضمنی انتخاب میں پولنگ جاری

پی ایس 11 کا ضمنی معرکہ، پولنگ کا عمل جاری۔ پولنگ اسٹیشنز کے اندر اور باہر پاک فوج کے جوان تعینات۔ پیپلز پارٹی کا تحریک انصاف اور جے یو آئی کے حمایت یافتہ امیدوار سے کانٹے کا مقابلہ متوقع۔

سندھ اسمبلی کے حلقہ پی ایس 11 میں ضمنی الیکشن کے لیے پولنگ کا عمل جاری ہے۔ پولنگ صبح 8 سے شام 5 بجے تک ہو گی۔

دو تگڑے امیدوار، پیپلزپارٹی کے جمیل احمد سومرو اور جی ڈی اے کے معظم علی خان کے درمیان کانٹے کا مقابلہ متوقع ہے۔ ان دونوں کے علاوہ 9 اور امیدوار بھی میدان میں ہیں۔ ضلع بھر میں عام تعطیل کا اعلان ہے۔

ذرائع کے مطابق حلقے کے 138 پولنگ اسٹیشنز میں سے 20 کو انتہائی حساس اور 50 کو حساس ٹھہرایا گیا ہے۔

حلقہ پی ایس 11 میں تقریباً رجسٹرڈ ايک لاکھ 52 ہزار سے زائد ووٹرز ہیں جو کہ اپنے ووٹ کا حق استعمال کر سکتے ہیں۔

ذرائع کے مطابق مرد ووٹرز کی تعداد 83 ہزار 16 جبکہ خواتین ووٹرز کی تعداد 69 ہزار 598 ہے۔

اس الیکشن کی پولنگ کے دوران تمام پولنگ اسٹیشنز کے اندر اور باہر پاک فوج کے جوان تعینات ہیں۔

آپ کو بتاتے چلیں کہ جی ڈی اے کے امیدوار معظم عباسی کو پی ٹی آئی اور جمعیت علمائے اسلام (ف) کی حمایت حاصل ہے۔

آپ کو بتاتے چلیں کہ اس نشست پر عام انتخابات ميں جی ڈی اے کے معظم عباسی نے نثار کھوڑو کی صاحبزادی ندا کھوڑو کو 12 ہزار ووٹوں سے شکست دی تھی۔ بعد میں سپريم کورٹ نے 26 ایکڑ اراضی چھپانے پر معظم عباسی کو نااہل قرار دیا تھا۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers