قومی

حکومتی ارکان کی ٹویٹر پر اپوزیشن پر کڑی تنقید

فردوس عاشق اعوان کی سیاسی مخالفین پر تنقید۔ کہا کہ مولانا ن لیگ اور پیپلز پارٹی سے مایوس ہو چکے ہیں۔ یہ لوگ آپس میں مخلص نہیں تو قوم سے کیا وفا نبھائیں گے۔ فیصل واوڈا نے کہا کہ کیا فضل الرحمان عمران خان کی طرح بارش میں اپنے کارکنان کے ساتھ ہونگے۔

سماجی رابطے کی ویبسائٹ ٹویٹر پر وفاقی وزراء اور مشیر نے مولانا اور اپوزیشن پر خوب تنقید کی۔ معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان کا اپنے ٹویتر پیغام میں کہنا تھا کہ مولانا کا رات خطاب پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن سے دلبرداشتہ رویے اور مایوسیوں کا اظہار تھا۔پہلے دن کہا تھا کہ یہ لوگ آپس میں مخلص نہیں تو قوم سے کیا وفا نبھائیں گے؟

ایک اور ٹویٹ میں ان کا کہنا تھا کہ مولانا خود فریبی سے نکلیں، عوام کو تنگ نہ کریں۔ آپ سازش میں ناکام ہوچکے ہیں۔عام انتخابات میں ریجیکٹ ہونے والے جتھے کی صورت حقیقی عوامی مینڈیٹ کی توہین اور جمہوری نظام پر حملہ آور نہ ہوں۔

وفاقی وزیر فیصل واوڈا کا ٹویٹر پر کہنا تھا کہ میں اُمید کرتا ہوں کہ عمران خان کی طرح مولانا صاحب بھی اپنے معصوم کارکنان کے ساتھ اسلام آباد کے اس موسم میں کھلے میدان میں اُن کے ساتھ ہونگے۔ قدرت بھی چاہتی ہے کہ کرپٹ مافیا کو بچانے کے لئے مولانا صاحب ان کا استعمال نہ کریں۔

دوسری جانب وفاقی وزیر برائے سائنس فواد چوہدری نے ٹویٹر پر سب کو الرٹ کر دیا کہ اندرونی سیاسی سازشیں کشمیر سے توجہ ہٹائے ہوئے ہیں، مودی کا اب اگلا حملہ سندھ طاس معاہدہ پر ہو گا۔

ٹویٹر پر انہوں نے اپنی ٹویٹ میں کہا کہ ہماری اندرونی سیاسی سازشیں جس طرح کشمیریوں کی حالت زار سے ہماری توجہ ہٹائے ہوئے ہیں اس کے شدید نقصان کیلئے تیار رہیں۔

مودی کا اگلا نشانہ سندہ طاس معاھدہ ہو گا۔ بھارت پاکستان کے حصے کے پانی کو پتہ نہیں کیسے برداشت کر رہا ہے۔ پاکستان کے پاس آنکھ جھپکنے کا بھی وقت نہیں ، تیار رہیں۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers