قومی

نواز شریف سروسز ہسپتال سے ڈسچارج، گھر منتقل

نواز شریف کی صحت میں بہتری، ہسپتال سے گھر منتقل۔ سابق وزیراعظم کا مزید علاج گھر پر ہی ہوگا۔ گھر میں انتہائی نگہداشت یونٹ قائم۔ ڈاکٹر عدنان کی زیر صدارت شریف میڈیکل سٹی کے ڈاکٹرز 24 گھنٹے موجود رہیں گے۔

سابق وزیراعظم نواز شریف کو 16 دنوں بعد سروسز ہسپتال سے ڈسچارج کر دیا گیا۔

ان کی رہائشگاہ جاتی امراہ میں خصوصی میڈیکل یونٹ قائم کر دیا گیا ہے۔ جہاں ڈاکٹر عدنان کی زیر صدارت شریف میڈیکل سنٹر کے ڈاکٹرز 24 گھنٹے ان کی دیکھ بھال اور علاج کے لیے موجود رہیں گے۔

دوسری جانب مریم نواز کے روبکار جاری ہونے کے بعد انہیں رہا کر دیا گیا ہے۔ وہ جاتی امراہ میں اپنے والد کی دیکھ بھال کے لیے موجود ہوں گی۔

سروسز ہسپتال سے ڈسچارج کے موقع پر نوازشریف کی والدہ اور دیگر اہل خانہ بھی ساتھ تھے۔ ، نوازشریف ہسپتال کی عمارت سے نکل کر خود چل کر باہر آئے اور ایمبولینس میں بیٹھے۔

ذرائع کے مطابق شریف میڈیکل سٹی کی ایمبولینس کل رات ہی نواز شریف کو لینے سروسز ہسپتال پہنچ گئی تھی اور نوازشریف کو ڈسچارج بھی کر دیا گیا تھا لیکن انہوں نے رات سروسز میں ہی گزاری۔

سروسز ہسپتال سے ڈسچارج کے موقع پر کارکنان کی بڑی تعداد سروسز ہسپتال کے باہر موجود تھی جنہوں نے نوازشریف کی ہسپتال سے ڈسچارج ہونے پر نعرے بازی کی اور ان کی گاڑی پر پھولوں کی پتیاں بھی نچھاور کیں۔

آپ کو بتاتے چلیں کہ پچھلے ہفتے العزیزیہ ریفرنس میں اسلام آباد ہائیکورٹ نے سابق وزیراعظم نواز شریف کی طبی بنیادوں پر 8 ہفتوں کے لیے مشروط ضمانت منظور کی تھی۔ اس کے ساتھ ساتھ لاہور ہائی کورٹ نے بھی طبی بنیاس پر ان کی ضمانت کا حکم دیا تھا۔

آپ کو مزید بتاتے چلیں کہ گزشتہ ماہ سابق وزیراعظم نواز شریف کو طبیعت خراب ہونے پر سروسز ہسپتال منتقل کر دیا گیا تھا۔ ان کے خون میں پلیٹلیٹس کی تعداد بہت گر چکی تھی۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers