قومی

نواز شریف کی طبیعت بہت زیادہ خراب ہے، فوری باہر بھیجیں: مریم نواز

چوہدری شوگر ملز کیس میں نواز شریف کی حاضری سے استثنٰی کی درخواست منظور۔ مریم نواز رہائی کے بعد پہلی بار پیش ہوئیں۔ ضمانتی مچلکوں پر دستخط کیے۔ میڈیا سے غیر رسمی گفتگو میں کہا کہ نواز شریف کی طبیعت بہت زیادہ خراب ہے۔ علاج کے لیے فوری باہر بھیجنا چاہیے۔ صحت پہلے، سیاست بعد میں ہو گی۔

چوہدری شوگر ملز منی لانڈرنگ کیس میں ن لیگی رہنماء مریم نواز احتساب عدالت میں پیش ہو کر جج امیر محمد خان کے روبرو ہوئیں۔

مریم نواز کے وکیل امجد پرویز نے عدالت سے گزارش کرتے ہوئے کہا کہ ریفرنس دائر ہونے تک حاضری سے استثنیٰ دی جائے کیونکہ قانون میں اس کی گنجائش موجود ہے۔

معزز جج نے وکیل سے سوال کیا کہ مریم نواز کی ضمانتی مچلکے کہاں ہیں؟ جس پر انہوں نے جواب دیا کہ ضمانتی مچلکے جمع کروا دیئے ہیں اصل کاپی کورٹ میں جمع ہے۔

جج نے نیب پراسیکیوٹر سے سوال کیا کہ ریفرنس کب تک دائر کیا جائے گا؟ اس پر نیب کے وکیل کا کہنا تھا کہ ریفرنس جلد ہی عدالت میں دائر کر دیا جائے گا۔

عدالت نے استثنٰی کی درخواست منظور کر لی اور سماعت 22 نومبر تک ملتوی کر دی۔ اس کے ساتھ ہی ساتھ یوسف عباس کے ریمانڈ میں 22 تک توسیع بھی کی گئی۔

مریم نواز نے عدالت میں کہا کہ والد کو چھوڑ کر آنا مشکل تھا۔ پیشی کے حوالے سے عدالت کے حکم کی تعمیل کروں گی۔

میڈیا سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے مریم نواز کا کہنا تھا کہ نواز شریف کی طبیعت بہت زیادہ خراب ہے۔ نواز شریف کے پلیٹ لیٹس گزشتہ روز بھی گر گئے اور ان کی بیماری کی تشخیص نہیں ہو رہی۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ انہیں ملازمین اور نرسوں کے ساتھ نہیں چھوڑ سکتی،۔ 24 گھنٹے ان کے ساتھ ہوتی ہوں اور ان کے معاملات کو خود دیکھ رہی ہوں۔

نوازشریف کے کل پلیٹ لیٹس کی تعداد ایک بار پھر گر گئی تھی۔ ان کی بیماری کی تشخیص نہیں ہو رہی۔ ماں کے جانے کے بعد اب میرا سب کچھ میرے والد نواز شریف ہیں۔

انہوں نے کہا کہ صحت پہلے ہے، سیاست بعد میں ہو گی۔ نواز شریف کو علاج کے لیے فوراً باہر بھیجنا چاہیے اور جہاں علاج ممکن ہو وہاں جانا چاہیے۔
انہوں نے یہ بھی کہا کہ اگر نواز شریف علاج کے لیے باہر جاتے ہیں تو میرا ان کے ساتھ جانا مجبوری ہے، لیکن ایسا بہت مشکل ہے کہ میں بھی ساتھ جا سکوں۔

آپ کو بتاتے چلیں کہ 2 دن پہلے روبکار جاری ہونے پر چوہدری شوگر ملز کیس میں مریم نواز کو رہائی مل گئی تھی۔ جیل کے عملے نے ہسپتال میں ن لیگی رہنماء سے دستخط لیے۔ قانونی کارروائی مکمل ہونے کے بعد مریم نواز والد کے ہمراہ ہی ہسپتال سے گھر روانہ ہو گئی تھیں۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers