قومی

نیب کے پر کٹ گئے,صدر عارف علوی نے نیب ترمیمی آرڈیننس پر دستخط کر دیے

قومی احتساب بیورو کے پر کٹ گئے۔ صدر عارف علوی نے نیب ترمیمی آرڈیننس پر دستخط کر دیے ہیں۔ نیب ترمیمی آرڈیننس 2019 فوری طور پر نافذالعمل ہو گا۔ سرکاری ملازمین کے خلاف کارروائی کے اختیارات محدود ہو گئے۔ محکمانہ نقائص پر پر سرکاری ملازمین کے خلاف نیب کارروائی نہیں کرے گا۔ نیب کا کاروباری افراد کے خلاف کارروائی کا اختیار بھی ختم ہو گیا ہے۔

قومی احتساب بیورو کے پر کاٹنے کی تیاریاں مکمل۔ وفاقی کابینہ نے گرین سگنل دے دیا۔ مجوزہ آرڈیننس کے مطابق نیب 50 کروڑ کی کرپشن یا اسکینڈیل پر کوئی کارروائی نہیں کر سکے گا۔

اس کے علاوہ نیب محکمانہ نقائص پر کسی سرکاری ملازم کے خلاف کارروائی کا مجاز نہیں ہو گا۔ تاہم ایسے سرکاری ملازمین کے خلاف کارروائی کی جاسکے گی۔ جن کے خلاف محکمانہ نقائص سے فائدہ اٹھانے کے ٹھوس شواہد موجود ہوں گے۔

مجوزہ آرڈیننس میں کہا گیا ہے کہ کسی سرکاری ملازم کی جائیداد کو عدالتی حکم نامے کے بغیر منجمد نہیں کیا جائے گا۔ تاہم نیب کا سرکاری ملازمین کے اثاثوں میں غیر معمول اضافے اور اختیارات کے ناجائز استعمال کی صورت میں کارروائی کا حق ہو گا۔

مجوزہ آرڈیننس کے مطابق نیب نے 3 ماہ میں تحقیقات مکمل نہ کی تو گرفتار سرکاری ملازم ضمانت کا حقدار ہو گا۔ مجوزہ نیب ترمیمی آرڈیننس کے مطابق ٹیکس اسٹاک ایکسچینج اور پی آئی پی اوز سے متعلق امور میں نیب کا دائرہ اختیار ختم۔

ان تمام معاملات پر ایف بی آر ایس ای سی پی اور بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کارروائی کر سکیں گے۔

Comment here

instagram default popup image round
Follow Me
502k 100k 3 month ago
Share