قومی

وزیرِاعظم عمران خان کی زیرِ صدارت کابینہ نے آرمی ایکٹ میں ترمیم منظور کر دی

وزیراعظم عمران خان کی سربراہی میں وفاقی کابینہ کی ہنگامی بیٹھک۔ آرمی ایکٹ میں ترمیم کے مجوزہ مسودے پر بات چیت۔ اپوزیشن کا اعتماد میں لینے سے متعلق بھی مشاورت جاری۔ مہنگائی کے جن کو بوتل میں کیسے بند کرنا ہے۔ وزیراعظم نے پرائس کنٹرول سے متعلق اجلاس بھی آج بلا لیا۔

وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا ہنگامی اجلاس وزیراعظم ہاؤس میں ہوا۔ اجلاس میں وفاقی کابینہ اراکین کے علاوہ اہم شخصیات نے شرکت کی۔

اجلاس میں اہم سیاسی معاملات اور آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کے حوالے سے ترمیمی بل پر مشاورت کی گئی۔ ذرائع کے مطابق وفاقی کابینہ نے سپریم کورٹ کے احکامات کی روشنی میں آرمی ایکٹ میں ترمیم کی منظوری دے دی ہے جس میں آرمی چیف کی مدت ملازمت اور توسیع کا طریقہ کار واضح کیا گیا ہے۔

اب آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع سے متعلق بل قومی اسمبلی میں پیش کیا جائے گا۔ وزیراعظم نے آج ہی قیمتوں پرکنٹرول سے متعلق اجلاس بھی طلب کرلیا ہے۔

اجلاس میں قیمتوں میں کمی سے متعلق صوبائی حکومتوں کے اقدامات کا جائزہ لیاجائے گا اور صوبائی حکام صوبائی اقدامات پر بریفنگ دیں گے جبکہ قیمتوں پرکنٹرول سے متعلق ٹاسک فورس کی رپورٹ بھی پیش کی جائے گی۔

اس کے ساتھ ہی ساتھ نوجوان اراکین سینیٹ و قومی اسمبلی کو وزیراعظم ہاؤس بلالیا گیا ہے۔ اجلاس میں وزیراعظم ملکی موجودہ سیاسی صورت حال پر مشاورت کریں گے۔

آپ کو بتاتے چلیں کہ گزشتہ روز کابینہ کے ہونے والے اجلاس میں وزیراعظم نے یوٹیلیٹی سٹورز پر 6 ارب روپے کا ریلیف پیکچ دیا تھا۔ 7 جنوری 2020 سے عمل درآمد شروع ہوگا، عمران خان ریلیف پیکج کا افتتاح کریں گے۔

یوٹیلیٹی سٹورز کارپوریشن نے ریلیف پیکچ کو حتمی شکل دینا شروع کر دی، پیکچ کے تحت آٹے، گھی، چینی، دالوں، چاول پر سبسڈی دی جائیگی، ریلیف پیکچ کا اطلاق ابتدائی طور پر 3 ماہ کیلئے ہوگا۔ پیکچ کی کامیابی پر توسیع ہوسکے گی۔

Comment here

instagram default popup image round
Follow Me
502k 100k 3 month ago
Share