قومی

بھارتی چیف کی گیدڑ بھبکیوں پر ترجمان پاک فوج کا کرارا جواب

نئے بھارتی چیف کی پرانی گیدڑ بھبکیوں پر ترجمان پاک فوج کا کرارا جواب۔ میجر جنرل آصف غفور نے کہا کہ دشمن 27 فروری کو مزا چکھ چکا، اب کی بار جارحیت پر اس سے بھی مہلک جواب ملے گا۔ کشمیر پر حملے کی گیدڑ بھبکی اندرونی انتشار اور حالات سے توجہ ہٹانے کے لیے ہے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقاتِ عامہ کے ڈی جی میجر جنرل آصف غفور نے بھارتی آرمی چیف کے بیان پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ ایل او سی پر جارحیت سے متعلق بھارتی آرمی چیف کا بیان معمول کی ہرزہ سرائی ہے۔

سماجی رابطے کی ویبسائٹ ٹویٹر پر اپنے پیغام میں ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کی مسلح افواج بھارتی جارحیت کے کسی بھی اقدام کا جواب دینے کے لئے پوری طرح تیار ہیں۔

کہا کہ ایل او سی کے پار فوجی کارروائی کرنے کے لئے بھارتی آرمی چیف کے بیانات گھریلو لوگوں کی جانب سے جاری داخلی انتشار سے نکلنے کے لئے معمول کی بیان بازی ہے۔

پاک فوج کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں متعصب اور انتہا پسندانہ بھارتی سوچ سے آگاہ ہیں۔ دنیا کو مقبوضہ وادی میں بھارتی جبر کا نوٹس لینا چاہئے۔ بھارتی جبر خطے کے امن کے لیے خطرہ ہے بھارت کو 27 فروری 2019 یاد ہو گا، اب کی بار اس سے بھی زیادہ مہلک جواب ہو گا۔

آپ کو بتاتے چلیں کہ جنرل منوج مکنڈ نروانے نے آرمی چیف کا عہدہ سنبھالنے کے بعد نئی دہلی میں اپنی پہلی میڈیا بریفنگ میں کہا تھا کہ پارلیمانی قرارداد ہے کہ پوراکشمیر بھارت کاحصہ ہے۔

آپ کو بتاتے چلیں کہ اس وقت بھارت میں شہریت کے دوہرے قانون پر پورے ملک میں شدید احتجاج کی لہر دوڑ رہی ہے۔

بھارت کے تمام شہروں میں لوگ لاکھوں کی تعداد میں احتجاج کرنے باہر نکل ہرے ہیں۔ دلی میں جامع مسجد اور جواہر لال نہرو یونیورسٹی میں پولیس اور آر ایس ایس کے غنڈوں نے طلباء پر حملہ کیا ہے۔

بھارتی فلم انڈسٹری کے کئی معروف لوگوں جسے دیپیکا پاڈوکون، انیل کپور، انوراگ کشپ اور دیگر نے نے اس موجودہ صورتحال پر غم ورنج کا اظہار کیا ہے۔

عوام کی جانب سے حکومت سے شہریت کا یہ نیا بل واپس لینے کا مطالبہ ہے۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers