قومی

وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی کی ایرانی صدر اورہم منصب سے ملاقاتیں

 

پاکستان کا امن مشن، وزیرِ خارجہ کی ایرانی صدر اور وزیرِ خارجہ سے الگ الگ ملاقاتیں۔ شاہ محمود قریشی کہتے ہین کہ صدر روحانی نے کشیدگی کم کروانے کی پاکستانی کوششوں کو سراہتے ہوئے حمایت کا اعیادہ کیا۔ وزیرِ خارجہ آج ایران سے سعودی عرب جائیں گے۔ سعودی حکام سے ملاقاتین کریں گے۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کی تہران میں ایرانی صدر اور ایرانی وزیرخارجہ سے الگ الگ ملاقاتیں، خطے میں تناؤ کے خاتمے پر زور دیا گیا۔

سماجی رابطے کی ویبسائٹ ٹویٹر پر اپنے جاری کردہ پیغام میں

Shah Mahmood Qureshi said Iranian President Hassan Rouhani had constructive and positive talks.

ہم نے تہیہ کررکھا ہے کہ خطے میں امن و استحکام کے لیے سفارتی کوششیں جاری رکھیں گے اور پاکستانی سرزمین کسی جنگ کے لیے استعمال نہیں ہوگی۔

ایرانی وزیرِ خارجہ جواد ظریف سے ملاقات کے دوران ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کے ایران کے ساتھ گہرے مذہبی، تاریخی اور ثقافتی تعلقات ہیں۔ پاکستان ایران کے ساتھ تعلقات کو اہمیت دیتا ہے۔ ایران امریکا کشیدگی کا معاملہ افہام و تفہیم سے حل کرنے کی ضرورت ہے۔
کل روز شاہ محمود قریشی مشہد پہنچے تھے۔ جہاں ڈپٹی گورنر جنرل خراسان نے ان کا استقبال کیا تھا۔ وزیر خارجہ نے مشہد میں امام رضاعلیہ السلام کے روضہ مبارک پر حاضری دی۔ حاضری کے بعد وزیر خارجہ شاہ محمودقریشی وفد کے ہمراہ تہران روانہ ہوئے۔

دورے پر سیکرٹری خارجہ سہیل محمود اور وزارت خارجہ کے سینئر حکام بھی وزیرخارجہ کے ہمراہ ہیں۔ شاہ محمود قریشی ایران کے دورے کے بعد آج اعلی سطحی وفد کے ہمراہ سعودی عرب پہنچیں گے جہاں خطے میں امن کو مستحکم کرنے کے حوالے سے بات چیت کے عمل کو آگے بڑھایا جائے گا۔

آپ کو بتاتے چلیں کہ وزیراعظم عمران خان نے چند روز قبل سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے کہا تھا کہ میں نے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کو ہدایت کی ہے کہ وہ ایران، سعودی عرب اور امریکا کا دورہ کریں۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers