قومی

318 پارلیمنٹیرینز اور اراکین صوبائی اسمبلی کی رکنیت معطل

مالی گوشوارے جمع نہ کرانے پر 318 پارلیمنٹیرینز اور اراکین صوبائی اسمبلی کی رکنیت معطل۔ فواد چوہدری نورالحق قادری، راجہپرویز اشرف، طارق بشیر چیمہ اور فروغ نسیم بھی رکنیت معطل ہونے والوں میں شامل۔ الیکشن کمیشن کے مطابق معطل شدہ اراکین کسی بھی قانون سازی میں حصہ نہیں لے سکیں گے۔

الیکشن کمیشن کی جانب سے اثاثوں کے گوشوارے جمع نہ کرانے والے اراکین قومی و صوبائی اسمبلی اور سینیٹرز کی رکنیت معطل کر دی گئی ہے۔

حکومتی ارکان میں سے وفاقی وزرا فروغ نسیم، فواد چودھری ، طارق بشیر چیمہ اور نورالحق قادری کے علاوہ زرتاج گل، عامرلیاقت بھی رکنیت معطل ہونے والوں میں شامل ہیں۔

الیکشن کمیشن کے مطابق 1195 اراکین پارلیمنٹ میں سے 876 اراکین نے گوشوارے جمع کرائے ہیں۔ قومی اسمبلی کے 70 اور سینیٹ کے 12 اراکین، پنجاب اسمبلی کے 115، سندھ اسمبلی 40، خیبرپختونخواہ اسمبلی کے 60 اور بلوچستان اسمبلی کے 21 ممبران کی رکنیت معطل کی گئی ہے۔

دیگر ارکان میں وزیراعلیٰ سندھ مرادعلی شاہ کی رکنیت بھی معطل کردی گئی ہے۔ ان کےعلاوہ شرجیل میمن، حاصل بزنجو، فروغ نسیم، نادر مگسی، حسنین مرزا کی رکنیت معطل ہوئی ہے۔ منزہ حسن، ساجدہ بیگم، عبدالقادر پٹیل، ثناء اللہ مستی خیل کی بھی رکنیت معطل کردی گئی ہے۔

معطل ہونے والے پارلیمنٹرینز اسمبلی اجلاس اور قانون سازی میں حصہ نہیں لے سکتے۔ ذرائع کے مطابق اس سے متعلق الیکشن کمیشن نے پارلیمنٹ اور چاروں صوبائی اسمبلیوں کے سیکرٹریز کو آگاہ بھی کردیا۔

Comment here

379,066Subscribers
8,414Followers