قومی

ن لیگ کے ایم پی اے کاشف چوہدری جعلی ڈگری پر نا اہل

لیگی ایم پی اے کاشف چوہدری جعلی ڈگری پر نا اہل قرار۔ اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس عامر فاروق نے نا اہلی کیس کا محفوظ فیصلہ سنا دیا۔ الیکشن کمیشن کو ڈی نوٹیفائی کرنے کا حکم۔

اسلام آبا دہائی کورٹکے جسٹس عامر فاروق نے اوپن کورٹ میں ن لیگی ایم پی اے کاشف محمود چوہدری کی نااہلی کا فیصلہ سنا دیا۔

درخواست گزار عبدالغفار نے کاشف چوہدری کو آئین کے آرٹیکل 62 ون ایف کے تحت الیکشن کمیشن میں جعلی ڈگری جمع کرانے پر نااہل قرار دینے کی درخواست دائر کی تھی۔

ان کا مؤقف تھا کہ جعلی ڈگری کی بنیاد پر کاشف چوہدری نے 2018 کی الیکشن میں حصہ لیا۔ انہوں نے اصل حقائق چھپائے اور جھوٹا بیان حلفی داخل کیا۔

عبدالغفار کا مزید مؤقف تھا کہ الخیر یونیورسٹی نے تصدیق کی کہ کاشف چوہدری کبھی یونیورسٹی کے طالب علم ہی نہیں رہے۔ وہ صادق اور امین نہیں اس لیے عدالت بطور رکن صوبائی اسمبلی انھیں نااہل قرار دے۔

عدالت نے 5 نومبر کو وکلاء کے دلائل مکمل ہونے پر لیگی کے ایم پی اے کاشف محمود کی نااہلی کا فیصلہ محفوظ کیا تھا۔

آج عدالت نے فیصلہ سناتے ہوئے الیکشن کمیشن کو کاشف چوہدری کی اسمبلی کی رکنیت ختم کرکے فوری ڈی نوٹیفائی کرنے کا حکم دے دیا ہے۔

آپ کو بتاتے چلیں کہ کاشف چوہدری 2018 کے عام انتخابات میں پی پی 241 بہاول نگر سے ن لیگ کے ایم پی اے منتخب ہوئے تھے۔

instagram default popup image round
Follow Me
502k 100k 3 month ago
Share