قومیکاروبار

آئی ایم ایف کے وفد کا دورہ پاکستان، آج سے مذاکرات ہوں گے

پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان باقاعدہ مذاکرات آج سے شروع ہوں گے۔ آئی ایم ایف کا وفد جائزے کے لیے 3 سے 13 فروری تک پاکستان کا دورہ کرے گا، جس کی قیادت مشن چیف ارنسٹو رمریز ریگو کریں گے۔

وزارت خزانہ کے ذرائع کے مطابق اسلام آباد میں مذاکرات 54 کروڑ ڈالر کی تیسری قسط کے لئے ہونگے۔ آئی ایم ایف وفد مذاکرات میں پاکستانی معیشت کا سہ ماہی جائزے لے گا۔

ذرائع کے مطابق اجلاس میں ایف بی آر کی ٹیکس وصولیوں کے اہداف میں ناکامی بڑا چیلنج ہوگا جبکہ سرکلر ڈیٹ سمیت توانائی سیکٹر میں اصلاحات بھی ایک بڑا چیلنج ہوگا۔

آئی ایم ایف وفد توانائی اور ٹیکس اصلاحات کا جائزہ لے گا۔ آئی ایم ایف وفد مشیر خزانہ ڈاکٹرعبدالحفیظ شیخ، ایف بی آر حکام سے بھی ملاقات کرے گا۔  آئی ایم ایف وفد کے ساتھ رواں مالی سال کی دوسری سہ ماہی جو کہ دسمبر 2019ء تک کی ہے، اس کے اعداد و شمار پر تبادلہ خیال ہوگا۔

پاکستان کو آئی ایم ایف سے 2 اقساط میں ایک ارب 44 کروڑ ڈالر مل چکے ہیں۔ آئی ایم ایف حکام 12 روز تک پاکستان میں قیام کریں گے۔ اس دوران بجٹ سازی، دوسرے اقتصادی جائزے، منی بجٹ لانے سمیت دیگر اقدامات پر غور ہوگا۔

آپ کو بتاتے چلیں کہ پاکستان کو  آئی ایم ایف کی جانب سے اب تک ایک ارب 45 کروڑڈالر کاقرضہ مل چکا ہے۔ 3 جولائی 2019 کو آئی ایم ایف نے پاکستان میں معاشی استحکام کے لیے تین سال کے عرصے میں 6 ارب ڈالر قرض فراہم کرنے کی منظوری دی تھی۔

 

instagram default popup image round
Follow Me
502k 100k 3 month ago
Share