قومی

بچوں سے زیادتی کے ملزموں کو سخت سزاؤں کیلئے تیاریاں مکمل

خیبر پختونخوا میں بچوں سے زیادتی کے ملزموں کو سخت سزاؤں کیلئے تیاریاں مکمل کر لی گئیں۔ ڈپٹی چیف چائلد پروٹیکشن کمیشن محمد اعجاز نے آپ نیوز سے ٹیلی فونک گفتگو میں بتایا کہ چائلڈ پروٹیکشن ایکٹ میں ترامیم کے بعد سزاؤں اور جرمانوں کو سخت کیا گیا ہے۔

سرِعام پھانسی کی بجائے سزائے موت پانے والے مجرموں کی پھانسی کی ویڈیو اور آڈیو بنا کر اس کی تشہیر کی ذیلی شق شامل کی گئی۔ مجرم کو عمر قید کی سزا طبعی موت تک کی ہو گی۔ پورنو گرافی میں ملوث افراد کی سزا 7 سال سے 14 سال قید اور 50 لاکھ روپے جرمانہ ہو گا۔ جنسی ہراسانی میں ملوث ‌‌شخص کی سزا بڑھا کر 14 سال قید اور 50 لاکھ روپے جرمانہ ہو گی۔ ہراسانی میں مرتکب کسی بھی شخص کو تعلیمی ادارے میں ملازمت نہیں دی جائیگی۔ جنسی ہراسانی میں ملوث شخص کی تفصیلات رجسٹر میں درج کر کے چائلڈ کمیشن کی ویب سائٹ پر اپلوڈ کی جائیں گی۔

instagram default popup image round
Follow Me
502k 100k 3 month ago
Share