پی ایس ایلکھیل

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز اور پشاور زلمی کے درمیان پنجہ آزمائی

Gladiators-Zalmi-PSL-T20

سنسنی سے بھرپور ایچ بی ایل پاکستان سپر لیگ گذشتہ 4 سالوں سے شائقینِ کرکٹ کی توجہ کا محور ہے۔ یہاں چند مخصوص ٹاکرے بھی ایونٹ کو چار چاند لگانے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں اور انہی میں سے ایک ٹاکرا کوئٹہ گلیڈی ایٹرز اور پشاور زلمی کے درمیان ہے۔

دونوں ٹیمیں ایک ایک مرتبہ ایونٹ کا ٹائٹل جیت چکی ہیں۔ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی ٹیم تو ایچ بی ایل پی ایس ایل فائیو میں اپنے اعزاز کا دفاع بھی کرے گی۔ دونوں ٹیموں کا ایچ بی ایل پی ایس ایل میں جیت کا تناسب بھی بہترین ہے۔ دفاعی چیمپئن کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کا ایونٹ میں کامیابی کا تناسب 61.90 جبکہ پشاور زلمی 58.69 کے تناسب کے ساتھ اس فہرست میں دوسرے نمبر پر ہے۔

ایونٹ کے گذشتہ ایڈیشنز میں دو مرتبہ پلے آف مرحلےمیں مدمقابل آنے والی دونوں ٹیمیں ایچ بی ایل پی ایس ایل 2017 کے فائنل میں پنجہ آزمائی بھی کرچکی ہیں۔ لیگ کے دوسرے ایڈیشن کےفائنل میں پشاورزلمی نے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو 58 رنز سے شکست دے کر ٹائٹل اپنے نام کیا تھا۔ ڈیرن سیمی کی قیادت میں پشاور زلمی نے چمچماتی ٹرافی قذافی اسٹیڈیم لاہور میں موجود تماشائیوں کے سامنے فضاء میں بلند کی تھی۔

سرفراز احمد کی قیادت میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی ٹیم نے فائنل میں شکست کا بدلہ پشاور زلمی سے اپنے ہوم گراؤنڈ پر لیا۔ گذشتہ ایڈیشن کے دوران نیشنل اسٹیڈیم کراچی میں کھیلے گئے فائنل میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے پشاور زلمی کو 8 وکٹوں سے شکست دی۔

دونوں ٹیمیں مجموعی طور پر ایونٹ کے چار میں سے تین فائنل میں رسائی حاصل کرچکی ہیں۔ ایچ بی ایل پی ایس ایل فائیو میں دونوں ٹیمیں دو مرتبہ لیگ مرحلے میں مدمقابل آئیں گی۔ دونوں ٹیموں کے درمیان پہلا ٹاکرا 22 فروری کو نیشنل اسٹیڈیم کراچی اور دوسرا 5مارچ کو پنڈی کرکٹ اسٹیڈیم راولپنڈی میں کھیلا جائے گا۔

سابقہ نتائج:

دونوں ٹیموں کے درمیان سابقہ مقابلوں کے نتائج کی تفصیلات مندرجہ ذیل ہیں:

دونوں ٹیمیں اس سے قبل14مرتبہ مدمقابل آئیں جہاں 8میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرزاور5میں پشاور زلمی نےکامیابی حاصل کی جبکہ ایک میچ بغیر کسی نتیجہ کے ختم ہوا۔

دونوں ٹیموں کے درمیان سنسنی خیز میچوں کا آغاز ایچ بی ایل پی ایس ایل 2016 کے پہلے کوالیفائر سے شروع ہوا۔ میچ میں گلیڈی ایٹرز نے زلمی کو1 رنز سے شکست دے کر فائنل میں جگہ بنائی۔ اس سے قبل دونوں ٹیمیں اسی ایڈیشن میں 2مرتبہ گروپ مرحلے میں مدمقابل آئی تھیں جہاں فتح ایک مرتبہ کوئٹہ اور ایک مرتبہ پشاور کے نام رہی۔

ایچ بی ایل پی ایس ایل 2017 میں بھی دونوں ٹیمیں پلے آف مرحلے میں ٹکرائیں جہاں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے ایک مرتبہ پھر پشاور زلمی کو1 رنز سے شکست دے کر فائنل میں رسائی حاصل کی۔ جس کے بعد پشاور زلمی نے کراچی کنگز کو ایلیمنٹر میچ میں شکست دے کر ایونٹ کے فائنل میں رسائی حاصل کی اور کوئٹہ کو فائنل میں شکست دے کر ٹائٹل اپنے نام کیا۔

لیگ کے تیسرے ایڈیشن میں دونوں ٹیموں نے تیسری اور چوتھی پوزیشن کے لیے ایلیمنٹر میچ کھیلا جہاں زلمی نے گلیڈی ایٹرز کو شکست دے کر تیسری پوزیشن اپنے نام کی۔اس میچ میں پشاور زلمی نے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو 1 رنز سے شکست دی۔ یہ مسلسل تیسری مرتبہ ایسا موقع تھا جہاں دونوں ٹیموں کے درمیان پلے آف مرحلے میں میچ جیتنے والی ٹیم محض ایک رنز سے کامیاب رہی تھی۔

گذشتہ ایڈیشن میں بھی دونوں ٹیمیں 4 مرتبہ مدمقابل آئیں۔ گروپ مرحلوں کے علاوہ دونوں ٹیمیں ایک مرتبہ پلے آف اور دوسری مرتبہ فائنل میں مدمقابل آئیں۔ دونوں مرتبہ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے پشاور زلمی کو شکست دے کر ایونٹ کا ٹائٹل اپنے نام کیا۔ پہلے 10رنز اور دوسری مرتبہ گلیڈی ایٹرز نے 8 وکٹوں سے کامیابی حاصل کی۔

ایچ بی ایل پی ایس ایل 2020 میں دونوں ٹیموں میں شامل اہم کھلاڑی:

ایچ بی ایل پی ایس ایل2020 میں ٹائٹل جیتنے کی دوڑ میں شامل دونوں ٹیموں نے متوازی اور بہترین اسکواڈ کا انتخاب کیا ہے۔پشاور زلمی کی ٹیم میں سب سے نمایاں بلے باز کامران اکمل ( 47 میچوں میں 1286 رنز) اور باؤلر وہاب ریاض (45میچوں میں 65 وکٹیں) شامل ہیں۔ رواں سال شعیب ملک کی پشاور زلمی میں شمولیت کے باعث اسکواڈ کی بیٹنگ لائن اپ کو مزید تقویت ملی ہے۔ بین الاقوامی ٹی ٹونٹی کرکٹ میں 2309 رنز بنانے والے شعیب ملک کے علاوہ ٹام بنٹن بھی پشاور زلمی کی بیٹنگ لائن اپ کا اہم حصہ ہیں۔

اس کے علاوہ کیرون پولارڈ، ڈیرن سیمی اور امام الحق گذشتہ ایڈیشنز میں پشاور زلمی کے لیے بیٹنگ میں عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کرچکے ہیں۔ اسی طرح سپلیمنٹری کٹیگری میں نوجوان کرکٹر حیدر علی حال ہی میں آئی سی سی انڈر 19 ورلڈکپ میں پاکستان کی نمائندگی کرچکے ہیں۔

باؤلنگ کے شعبہ میں وہاب ریاض کے علاوہ انجری سے صحتیاب ہونے والے حسن علی،راحت علی، نوجوان اسپنر محمد محسن، عامر علی اور فاسٹ باؤلر عامر خان بھی پشاور زلمی کےاہم ہتھیار ثابت ہوں گے۔ عامر علی اور عامر خان حال ہی میں آئی سی سی انڈر 19 ورلڈکپ میں پاکستان کی نمائندگی کرچکے ہیں۔ محمد محسن ایمرجنگ ٹیمز ایشیا کپ کی فاتح پاکستان ٹیم کا حصہ تھے۔

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی امیدوں کا محور اس ایڈیشن میں بھی شین واٹسن ہوں گے۔ گذشتہ ایڈیشن میں پلیئر آف دی ٹورنامنٹ کا اعزاز جیتنے والے شین واٹسن کے علاوہ انگلینڈ کے جارحانہ مزاج بیٹسمین جیسن رائے، عمر اکمل اور احمد شہزاد بھی سرفراز احمد کی قیادت میں متوازی بیٹنگ لائن اپ کا حصہ ہیں۔

باولنگ کے شعبہ میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو حریف ٹیموں پر سبقت اس لحا ظ سے حاصل ہوگی کہ اسکواڈ میں شامل 2 تیز ترین باؤلر ایونٹ سے قبل ہی تمام فرنچائزز پر اپنی دھاک بٹھاچکے ہیں۔ نسیم شاہ اور محمد حسنین ایچ بی ایل پی ایس ایل فائیو میں شاندار کارکردگی کا عزم لیے میدان میں اتریں گے۔نوجوان کھلاڑیوں کو تجربہ کار ٹیمل ملز کا ساتھ بھی میسر ہوگا۔ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے اسپن باؤلنگ ڈیپارٹمنٹ میں محمد نواز، فواد احمداورآرش علی خان جیسے اسپنرز موجود ہیں۔

ایچ بی ایل پی ایس ایل 2020 بیس فروری سے بائیس مارچ تک کراچی، لاہور، راولپنڈی اور ملتان میں کھیلی جائے گی۔ایونٹ کا پہلا میچ دفاعی چیمپئن کوئٹہ گلیڈی ایٹرز اور اسلام آباد یونائیٹڈ کے درمیان کراچی میں جبکہ فائنل لاہور میں کھیلا جائے گا۔

لیگ کے لیے ٹکٹوں کی آن لائن بکنگ www.yayvo.com پر دستیاب ہے جبکہ شائقین کرکٹ ٹی سی ایس کے ایکسپریس سنٹرز سے بھی ٹکٹ خرید سکتے ہیں۔

اسکواڈز:

پشاور زلمی:

وہاب ریاض، حسن علی، کیرون پولارڈ، ٹام بنٹن، شعیب ملک، کامران اکمل، لیام ڈاسن، ڈیرن سیمی، امام الحق، محمد محسن، راحت علی، لوئس گریگری، عادل امین، عمر امین، عامر خان، عامر علی، لیام لیونگ اسٹون، حیدر علی اور کارلوس بریتھ ویٹ۔

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز:

سرفراز احمد (کپتان)، جیسن رائے، محمد نواز، بین کٹنگ، شین واٹسن، احمد شہزاد، فواد احمد، عمر اکمل، محمد حسنین، سہیل خان، ٹیمل ملز، عبدالناصر، نسیم شاہ، احسان علی، آرش علی خان، اعظم خان، کیمو پاؤل، خرم منظوراور زاہد محمود۔

instagram default popup image round
Follow Me
502k 100k 3 month ago
Share