پی ایس ایلکھیل

پی سی بی کی کرکٹ کمیٹی کے اجلاس کی کارروائی

پاکستان کرکٹ بورڈ کی کرکٹ کمیٹی کا سال 2020 میں پہلا اجلاس بدھ کے روز کراچی میں ہوا۔ سابق ٹیسٹ اسپنر اقبال قاسم کی سربراہی میں منعقدہ اجلاس میں وسیم اکرم، عمر گل،عروج ممتازاورعلی نقوی نے شرکت کی۔ وسیم خان اور ذاکر خان بطور غیرفعال رکن اجلاس میں شریک تھے۔

قومی کرکٹ ٹیم کے چیف سلیکٹر اور ہیڈکوچ مصباح الحق کے علاوہ ڈائریکٹر ڈومیسٹک کرکٹ پی سی بی ہارون رشید نے اجالس میں خصوصی شرکت کی۔

کرکٹ کمیٹی نے پی سی بی کو ڈومیسٹک سیزن21-2020 کے دوران ڈیپارٹمنٹل ٹیموں پر مشتمل ڈومیسٹک ٹورنامنٹ منعقد کروانے کی تجویز دی ہے۔ اس سلسلے میں ڈائریکٹرڈومیسٹک کرکٹ کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ آئندہ سیزن میں ممکنہ ونڈو کاجائزہ لینے کے بعد کمیٹی کو آگاہ کریں۔ کرکٹ کمیٹی کا آئندہ اجالس اپریل میں متوقع ہے۔

اس موقع پر ہارون رشید نے کمیٹی کو بتایا کہ رواں سیزن کے دوران پی سی بی اب تک 20 ٹورنامنٹس کا انعقاد کرچکاہے جس میں292 میچز شامل تھے۔اجلاس کے د وران ہارون رشید نے کمیٹی کو کھلاڑیوں کے لیے کھانے، پریکٹس کی سہولیات اورپچز کے معیار میں بہتری لالنے سے متعلق بھی بریفنگ دی ۔ کمیٹی نے آئندہ اجلاس میں ہارون رشید کو دیگر معاملات پر بھی بریفنگ تیار کرنے کی ہدایت کی ہے۔ کرکٹ کمیٹی نے رواں سیزن میں کرکٹ کے معیار میں بہتری کو سراہاہے،اس حوالے سے کھلاڑیوں کی آراء بھی مثبت رہی ہیں۔
اجلاس کے دوران 6 کرکٹ ایسوسی ایشنز کے کوچز کی تعیناتی اور ان کی کارکردگی کا جائزہ لینے سے متعلق عمل پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔اجلاس میں اتفاق کیا گیا ہے کہ اعلی کوچز کی صلاحیتوں میں مزید نکھار لانے کے لیےہر ممکن ضروری اقدامات اٹھائے
جائیں گے۔
چیف ایگزیکٹو پی سی بی وسیم خان نے واضح کیا ہے کہ کھلاڑیوں کے لیےایک بہتریناور مؤثر این او سی پالیسی تیار کی گئی ہے کرکٹ کمیٹی نے نئی این او سی پالیسی کی حمایت کرتے ہوئے درخواست کی ہے کہ پی سی بی تمام کھلاڑیوں کو ڈومیسٹک کرکٹ
کو ترجیح دینے سے متعلق پالیسی پرسختی سے عمل کروائے۔

اس موقع پر کرکٹ کمیٹی ا ورمصباح الحق کے درمیان مفید تبادلہ خیال ہوا۔ مصباح الحق نے کمیٹی کو سلیکشن پالیسی، کارکردگی اور مستقبل کے حوالے سے اپنے الئحہ عمل کے بارے میں آگاہ کیا۔اس موقع پر کرکٹ کمیٹی نے انہیں سلیکشن پالیسی میں مزید
وضاحت النے کی ہدایت کی ہے۔
مصباح الحق نے کمیٹی کو آگاہ کیا ہے کہ انہوں نے خصوصاَٹی ٹونٹی کرکٹ کے لیے بہترین کھلاڑیوں کی نشاندہی کرلی ہے۔ ہیڈ کوچ نے کہاکہ ایچ بی ایل پی ایس ایل2020 کا انعقاد رواں سال ایشیا کپ اور آئی سی سی ٹی ٹونٹی ورلڈکپ کے لیے قومی ٹیم کے
انتخاب میں اہم ثابت ہوگا۔

عروج ممتاز نے کمیٹی کو گذشتہ 20 ماہ کے دوران خواتین کرکٹ میں بہتری اور ترقی سے متعلق آگاہ کیا۔ انہوں نے کمیٹی کو 21 فروری سے شروع ہونے والے آئی سی سی ویمنز ٹی ٹونٹی ورلڈکپ کے لیے قومی خواتین کرکٹ ٹیم کی تیاریوں سے متعلق بھی
بتایا۔ ایونٹ میں قومی خواتین کرکٹ ٹیم اپنا پہلا میچ 26 فروری کو ویسٹ انڈیز کےخالف کھیلے گی۔

عروج ممتاز نے کمیٹی کو آئی سی سی ویمنز انڈر 19 کرکٹ ورلڈکپ کے لیے پاکستان کی تیاریوں کے بارے میں بھی آگاہ کیا۔ کمیٹی نے مؤثر اقدامات پر عروج ممتاز کی کارکردگی کو سراہا۔ کمیٹی نے خواتین کرکٹ کے فروغ اور اس میں بہتری لانے کے لیے مزید اقدامات اٹھانے پر زور دیا ہے۔

 

انگلش کے لیے یہاں کلک کریں

Courtesy PCB

instagram default popup image round
Follow Me
502k 100k 3 month ago
Share