آئی ٹی انڈسٹری پر ود ہولڈنگ ٹیکس اور اسٹیٹمنٹ کی شرائط ختم کرنا بہترہے،وفاقی وزیر آئی ٹی

اسلام آباد(آئی این پی)وفاقی وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی امین الحق نے کہا ہے کہ آئی ٹی انڈسٹری پر ود ہولڈنگ ٹیکس اور اسٹیٹمنٹ کی شرائط ختم کرنا بہترہے، شعبہ آئی ٹی فعال بنانے اور زرمبادلہ کے زیادہ حصول کیلضروری ہے ان تمام تجاویز پر جلد فیصلے کیے جائیں جو محکمہ خزانہ کو ارسال کی ہیں،انہوں نے کہا کہ آئی ٹی انڈسٹری پر ود ہولڈنگ ٹیکس اور اسٹیٹمنٹ کی شرائط ختم کرنا بہترہے، سرمایہ کاری کرنے والوں پر کیپیٹل گین ٹیکس کا خاتمہ فائدہ مند ہوسکتا ہے لیکن یہ اقدامات ناکافی ہیں، ایف بی آر کو واضح ہدایات جاری کی جائیں تاکہ ابہام نہ رہے۔

بلوچستان کا 401مربع فٹ پر محیط استولا جزیرہ پاکستان کا بڑا سیاحتی مرکز بن سکتا ہے، ویلتھ پاک

اسلام آباد(آئی این پی )بلوچستان کا 401مربع فٹ پر محیط استولا جزیرہ پاکستان کا بڑا سیاحتی مرکز بن سکتا ہے،فیروزی پانی کا یہ غیر آباد جزیرہ سمندری حیات سے مزین ہے،۔ جزیرے پر دیوی کالی کے ہندو مندر کے کھنڈرات بھی موجود ہیں۔ویلتھ پاک کی رپورٹ کے مطابق بلوچستان میںواقع جزیرہ استولا بحیرہ عرب میں پاکستان کا پہلا سمندری محفوظ علاقہ ماحولیاتی سیاحت کیلئے بے پناہ امکانات پیش کرتا ہے۔ کرسٹل صاف اور فیروزی پانی کا یہ غیر آباد جزیرہ سمندری حیات سے مزین ہے جس میں اہم مچھلیاں اور نرم مرجان شامل ہیں۔ بائیو ڈائیورسٹی ہاٹ سپاٹ کے طور پر یہ ملک کو بہت زیادہ زرمبادلہ کمانے میں مدد کر سکتا ہے۔ جزیرے کی ماحولیاتی اور سیاحتی اہمیت کے بارے میں ویلتھ پاک کے ساتھ بات چیت میں، کنزرویٹر آف فاریسٹ اینڈ وائلڈ لائف ڈیپارٹمنٹ، بلوچستان سید علی عمران نے کہاکہ استولا پرندوں پر نظر رکھنے والوں، سمندری تنوع سے محبت کرنے والوں، اور محققین کے لیے مثالی ہے۔ محکمہ جنگلات اور جنگلی حیات نے 15 جون 2017 کو کنونشن آن بائیولوجیکل ڈائیورسٹی کے تحت جزیرے کو جزیرہ میرین پروٹیکٹڈ ایریا قرار دیا۔ یہ جزیرہ 401 مربع فٹ پر پھیلا ہوا ہے۔ معروف ماہی گیر سائنسدان، میرین فشنگ ڈیپارٹمنٹ کے سابق ڈی جی محمد معظم خان نے کہاکہ استولا اپنی منفرد خصوصیات کی وجہ سے سیاحوںاورمحققین کیلئے ایک جنت ہے۔ استولا بنیادی طور پر سبز سمندری کچھوے اور پیلے بل ٹرن کے گھونسلے کے طور پر مشہور ہے جسے مقامی طور پر کرچ کہتے ہیں۔ دنیا کے بیشتر عجائب گھروں میں اس پرندے کے زیادہ تر انڈے اسی جزیرے سے لیے گئے ہیں۔ جزیرے کے شمال میں، مرجان کے پیچ تمام متعلقہ زندگی کے ساتھ پائے جاتے ہیں۔ یہاں پائی جانے والی ایک اور انوکھی نسل بحیرہ عرب کی ہمپ بیک وہیل ہے جو کبھی کبھار آس پاس کے پانیوں میں پائی جاتی ہے۔ دیوی کالی کے ہندو مندر کے کھنڈرات بھی یہاں موجود ہیں۔ ہندو اس جزیرے کو ستدیپ کہتے تھے۔ زائرین کو راغب کرنے والے تمام عناصر تحفظ کے نظارے کے ساتھ یہاں موجود ہیں۔پاکستان ٹورازم ڈویلپمنٹ کارپوریشن کے منیجنگ ڈائریکٹر آفتاب الرحمن رانا نے کہاکہ یہ سچ ہے کہ ایسے علاقوں میں سیاحت سماجی، اقتصادی اور ثقافتی افزودگی کے ذرائع کو بحال کرنے اور بھرنے میں معاون ہے۔ لیکن تحفظ کے مقامات پر، مقصد اور حفاظتی عناصر کا بھی خیال رکھنا ضروری ہے۔ یہ قدرتی اثاثوں کے تحفظ کے ذریعے حیاتیاتی تنوع کی حفاظت اور بحالی میں مدد کرے گا، پی ٹی ڈی سی محفوظ اور صحت مند سیاحتی سرگرمیوں کو فروغ دینے کے لیے صوبائی اور قومی دونوں سطحوں پر محکموں کے ساتھ ہم آہنگی کا خواہاںہے۔

پاکستان میں 10کروڑ افراد کے بینک اکائونٹ نہیں ہیں، ویلتھ پاک

اسلام آباد(آئی این پی )پاکستان میں 10کروڑ افراد کے بینک اکائونٹ نہیں ہیں ،راست اقدام کا پلیٹ فارم غیر مقبول ہو گیا،راست کو اپنانے میں دس سال لگ سکتے ہیں۔ویلتھ پاک کی رپورٹ کے مطابق اسٹیٹ بینک آف پاکستان کی سنجیدہ کوششوں کے باوجودراست ادائیگی کا پلیٹ فارم عوام میں مقبول نہیں ہواہے۔ اس اقدام کا مقصد پورے ملک میں مالیاتی شمولیت اور بینکنگ ڈیجیٹائزیشن کو فروغ دینا ہے۔ راست پلیٹ فارم کے اس سست استعمال کے پیچھے مالیاتی خواندگی کی کم سطح، کم مالی شمولیت، رازداری اور سیکورٹی کے مسائل، ٹیکس سے بچنا اور معیشت کی رسمی دستاویزات شامل ہیں۔ پاکستان انسٹی ٹیوٹ آف ڈویلپمنٹ اکنامکس اسلام آباد کے سینئر ریسرچ اکانومسٹ ڈاکٹر محمود خالد نے ویلتھ پاک کو بتایا کہ پاکستان میں مالیاتی خواندگی اور شمولیت کی شرح بہت کم ہے۔ اکثر پاکستانیوں کے پاس بینک اکاونٹس نہیں ہیں اور جن کے اکاونٹس ہیں ان میں سے زیادہ تر اپنی آمدنی نکالنے کیلئے انہیں ایک ہی لین دین کے لیے استعمال کرتے ہیں۔ وہ نقد رقم رکھتے ہیں اور نقد کا استعمال کرتے ہوئے لین دین کرتے ہیں۔ لوگ اپنے لین دین کے لیے اپنے بینک اکاونٹس کا استعمال کرنے میں ہچکچاتے ہیں کیونکہ 1,000 میں سے صرف 360 لوگ اپنی کمائی کمرشل بینکوں میں جمع کراتے ہیں۔ ورلڈ بینک کے مطابق پاکستان دنیا میں تیسرا سب سے بڑا غیر بینک شدہ بالغ آبادی رکھتا ہے۔ تقریبا 70 فیصدپاکستانی بالغوں کے پاس بینک اکاونٹس نہیں ہیں جن کی تعداد دس کروڑ بنتی ہے۔ غیر بینک شدہ پاکستانی خواتین آبادی کا 82 فیصد ہیں۔ مرکزی بینک پاکستان میں مالیاتی شمولیت کو بڑھانے کے لیے بہت بڑی رقم کی سرمایہ کاری کر رہا ہے، لیکن یہ اب تک مطلوبہ سطح تک نہیں پہنچ سکا۔ پاکستان میں لوگ آگاہی کی کمی اور خوف کی وجہ سے راست اور دیگر مالیاتی خدمات استعمال کرنے سے گریزاں ہیں، پاکستان انسٹی ٹیوٹ آف ڈویلپمنٹ اکنامکس، اسلام آباد میں معاشیات کے پروفیسرڈاکٹر ابوالجلیل نے بتایاراست کا پہلا مرحلہ، جنوری 2021 میں شروع کیا گیا اور تنظیموں سے افراد کو بلک ادائیگیوں کو فعال کیا گیا۔ دوسرا مرحلہ راست کے تحت فرد سے فرد لین دین کی سہولت کے لیے ڈیزائن کیا گیا ہے۔ راست اقدام مارکیٹ میں دستیاب دیگر تمام ڈیجیٹل مالیاتی خدمات کے لیے ایک سہولت کار ہے، ڈاکٹر جلیل کے مطابق راست کو اپنانے میں پانچ سے 10 سال لگیں گے۔ یہ ڈیجیٹل معیشت کا حصہ ہے جو مقامی حالات کے مطابق ایک طویل مدتی رجحان ہے۔

عاطف اسلم کی سپر ہٹ گانے کیساتھ بھارت میں واپسی

کراچی (این این آی) عالمی شہرت یافتہ پاکستانی گلوکار عاطف اسلم کی اپنے نئے سپر ہٹ گانے رنگریزہ کے ساتھ بھارتی میوزک انڈسٹری میں واپسی ہوگئی ہے۔پاک بھارت کشیدگی کے باعث بھارت کی حکومت نے پاکستانی فنکاروں پر پابندی عائد کی ہوئی ہے لیکن عاطف اسلم، راحت فتح علی خان سمیت پاکستانی گلوکاروں کے چرچے آج بھی بھارت میں ہوتے نظر آرہے ہیں۔اب عاطف اسلم نے بھارتی پنجابی فلم کیلئے اپنا نیا گانا ریکارڈ کروایا ہے جس کا عنوان رنگریزہ ہے جبکہ گانا پنجابی زبان میں گایا گیا ہے۔

راج ببر کی بیٹی جوہی ببر کی خوبصورتی کے آگے بالی ووڈ اداکارائیں پانی کم

ممبئی(یواین پی) بالی ووڈ انڈسٹری کے مشہور ایکٹر راج ببر اپنے انداز اور اپنی اداکاری سے اپنی ایک الگ پہچان بنا چکے ہیںـراج ببر کی کئی فلمیں ہیں جو ناظرین کو سالوں سال یاد رہیں گیـ انہوں نے انصاف کا ترازو، پریم گیت، نکاح، وارث، سنسار، اعتبار، اگر تم نہ ہوتے، جیسی کئی ہٹ فلمیں بالی ووڈ کو دیـاترپردیش میں 23 جون 1952 کو پیدا ہوئے اداکار اور سیاستداں راج ببر کے دو بیٹے اور ایک بیٹی ہے آریا ببر، جوہی ببر اور پرتیک ببر، بتادیں کہ نادرا ظہیر سے انہیں دو بچے آریا ببر اور جوہی ببر ہے، جبکہ اداکارہ سمیتا پاٹل سے پرتیک ببر ہےـبتادیں کہ راج ببر ہی نہیں انکی بیٹی جوہی ببر بھی کسی بڑی اسٹار سے کم نہیں ہےـ جوہی ببر کی لیٹسٹ تصویریں دیکھ کر اپنی آنکھوں پر یقین ہی نہیں کرپارہے ہیںـجوہی ببر کی لیٹسٹ تصویریں سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہورہی ہےـ ان تصویروں میں دیکھا جاسکتا ہے کہ جوہی کافی اسٹائلش ہےـجوہی کا انداز فیشن اور لکس کسی بڑی اسٹار سے کم نہیں ہےـوہیں جوہی کی تصویر دیکھ ایک فین نے کمنٹ کرتے ہوئے کہا کیا بات ہے آپ کتنی خوبصورت ہےـبتادیں کہ جوہی نے سال 2003 میں آئی فلم کاش آپ ہمارے ہوتے سے اپنا فلمی کیریئر شروع کیاـ فلم میں وہ سونو نگم کے مقابلے کام کیاـاسکے بعد جوہی پنجابی فلم یارا نال بہرائل میں نظر آئی تھیـ اتنا ہی نہیں اس فلم کے بعد وہ ریفلیکشنس، انس: لو فار ایور اور اٹس مائی لائف میں نظر آچکی ہےـجوہی فلموں کے علاوہ سیریلس میں بھی کام کرچکی ہیںـ سال 2009 میں این ڈی ٹی وی امیجن چینل پر نشر ہوئے شو گھر کی بات ہے، میں کام کیاـ جوہی سوشل میڈیا پر کافی ایکٹیو رہتی ہےـجوہی ببر کی پیدائش 20 جولائی 1979 کو لکھنؤ میں پیدا ہوئی، جوہی کے والد راج ببر اور والدہ نادرہ ببر ہےـجوہی نے سال 2007 میں شوہر بیجوئے نمبیار سے شادی کی جو انکے پہلے شوہر تھے وہ ایک اسکرین پلے رائٹر تھے، انکا سال 2009 میں طلاق ہوگیا، اسکے بعد انہوں نے ٹی وی ایکٹر انوپ سونی سے شادی کیـ انہیں ایک بیٹا ہےـ

ہمیں ہر مقام پر رب کا شکر ادا کرنا چاہیے:ایمن خان

اسلام آباد (یواین پی)اداکارہ ایمن خان نے کہا کہ ہمیں ہر مقام پر رب کا شکر ادا کرنا چاہیے انہوں نے کہا کہ آپ جس مقام پر بھی ہوں ناشکری کرنے کے بجائے اپنے رب کا شکر ادا کریں۔ انہوں نے مزید کہا کہ اگر ہم اپنے ارد گرد غور کریں تو ہمیں اندازہ ہوتا ہے کہ ہم کئی لوگوں کی نسبت بہترین زندگی بسر کررہے ہیں۔

ادیب وقار انبالوی کی34 ویں برسی آج منایا جائے گا

ملتان(یواین پی) اردو کے ممتاز شاعر و صحافی اور ادیب وقار انبالوی کی34 ویں برسی آج26 جون بروزاتوار کو منایا جائے گا وہ 22 جون 1896کو ضلع انبالہ میں پیدا ہوئے تھے انہوںنے عملی زندگی کا آغاز شعبہ صحافت سے کیا جن میں پرتاب ،ملاپ ،ویر بھارت ،زمینداراور نوائے وقت کے نام سرفہرست میں شامل ہیں وقار انبالوی کی شاعری ور افسانوں کے کئی مجموعے شائع ہوئے وہ 26جون1988 کو وفات پاگئے تھے ۔

عمران خان نے وزارت اعظمٰی سے ہٹنے کے بعد رابطہ ختم کردیا، رمیز راجا

لاہور(اے ایف بی) پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین رمیز راجا نے کہا ہے کہ عمران خان نے وزارت اعظمٰی جانے کے بعد رابطہ ختم کردیا۔چئیرمین پاکستان کرکٹ بورڈ رمیز راجا نے پریس کانفرنس میں صحافی کے عمران خان سے متعلق سوال پرانکشاف کیا کہ عمران خان نے ان سے رابطہ ختم کردیا۔رمیز راجا نے کہا کہ میں نے نہیں بلکہ عمران خان نے وزیراعظم کے عہدے سے ہٹنے کے بعد رابطہ ختم کردیا ہے۔ جیسے ہی وہ گئے میرا رابطہ آف ہوگیا۔انہوں نے کردیا۔جب رمیز راجا سے پوچھا گیا کہ کیا بلاک کردیا تو چئیرمین پی سی بی نے اثبات میں سرہلایا اورمسکرا دئیے۔رمیز راجہ نے کہا کہ وزیر اعظم شہباز شریف کرکٹ بورڈ کے پیٹرن انچیف ہیں اپنے پروجیکٹس سے متعلق انہیں آگاہ کرنے کیلئے ملاقات کا وقت مانگا ہے۔رمیز راجا عمران خان کے قریب سمجھے جاتے تھے اورانہیں عمران خان نے ہی پی سی بی کا چئیرمین مقررکیا

الماتے میں جاری انٹرنیشنل ایونٹ میں پاکستان کے شجر عباس کا نیا ریکارڈ

لاہور:(اے ایف بی) الماتے میں جاری انٹرنیشنل میٹ میں پاکستان کے شجر عباس نے نیا قومی ریکارڈ بناڈالا۔شجر عباس نے سو میٹر ہیٹس میں 10.38 سکینڈز میں ریس مکمل کرکے ریکارڈ قائم کیا، اس سے پہلے اسلامک گیمز 2005 میں افضل بیگ نے سو میٹر کا فاصلہ 10.42 سکینڈز میں طے کرکے قومی ریکارڈ بنایا تھا۔ساہیوال سے تعلق رکھنے والے شجر عباس نے اس عمدہ کارکردگی کے ساتھ فائنل مرحلے میں بھی جگہ بنالی ہے، شجرعباس نے اس سیپہلے ایران میں دو سومیٹر ریس میں بھی 20.91 سکینڈز کے ساتھ ریکارڈ بنایا تھا۔دیگر کھلاڑیوں میں سیعبدالمعید نے چار سومیٹر فائنل کیلیے کوالیفائی کرلیا۔ شاہ نواز ڈسکس تھرو، سہیل عامر پندرہ سو اور پانچ ہزارمیٹرمیں حصہ لیں گے، شہروز ہائی جمپ میں قسمت آزمائیں گے۔

پاکستان کو سری لنکا کے خلاف سیریز میں کامیابی سمیٹنی چاہیے، عاقب جاوید

لاہور(اے ایف بی): قومی کرکٹ ٹیم کے سابق فاسٹ بولر عاقب جاوید نے کہا ہے کہ آسٹریلیا کی نسبت پاکستانی ٹیم سری لنکا میں کامیابی سمیٹ سکتی ہے۔لاہورقلندرز کے ہائی پرفارمنس سینٹر میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے ڈائریکٹر کرکٹ لاہور قلندر اور سابق فاسٹ بولر عاقب جاوید کا کہنا تھا کہ سری لنکا میں پاکستانی ٹیم کو مشکل نہیں ہوگی،وہاں کی پچز اور کنڈیشنز قومی کھلاڑیوں کو فائدہ دیتی ہیں، آسٹریلوی ٹیم کو ہمیشہ سری لنکا میں مسائل کا سامنا کرنا پڑا ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستانی بیٹرز اسپنرز کو اچھا کھیلنے کی اہلیت رکھتیہیں، میرے نزیک تو یہ سیریز پاکستان کو جیتنی چاہیے۔ یہ درست ہیکہ ہمیں مڈل آرڈر بیٹنگ کے ساتھ اسپن بولنگ اور آل راونڈرز کے شعبے میں مشکلات کا سامنا ہے۔سابق فاسٹ بولر نے دعویٰ کیا کہ ہمیں ایک سو چاللیس کی اسپیڈ والے بیس بولرز مل گئے ہیں جس سے قومی ٹیم کو مسئلہ نہیں ہوگا البتہ کوالٹی اسپنرز کی تعداد کم ہے، ہماری ٹیم میں جو خامیاں ہیں، ان پر توجہ دینے کی ضرورت ہے۔